485

سام سنگ کا پہلا ڈوئل سیلفی کیمرہ فون متعارف

ویسے تو لوگ سام سنگ کی ایس سیریز کے دیوانے ہیں مگر اس کمپنی کی اے سیریز بھی اب فیچرز کے لحاظ سے فلیگ شپ ڈیوائسز سے کم نہیں۔

سام سنگ نے خاموشی سے منگل کو اے سیریز کے دو نئے اسمارٹ فونز گلیکسی اے ایٹ (2018) اور اے 8 پلس (2018) متعارف کرادیئے ہیں۔

کہنے کو تو یہ فونز اس کمپنی کے مڈرینج یا درمیانی قیمت کے ہیں، مگر فیچرز کے لحاظ سے گلیکسی ایس ایٹ اور نوٹ ایٹ سے کچھ زیادہ پیچھے نہیں، جبکہ قیمت میں 50 فیصد سے زیادہ سستے ہیں۔

جی ہاں ان نئے فونز میں سام سنگ نے اپنے فلیگ شپ فونز کے متعدد فیچرز کا اضافہ کیا ہے۔

اور ہاں یہ سام سنگ کے پہلے فونز ہیں جن کے فرنٹ میں ڈوئل کیمرہ سیٹ اپ دیا گیا ہے۔

اس کے فرنٹ پر سولہ میگا پکسل اور 8 میگا پکسل کا کیمرہ موجود ہے جو کہ دھندلے پس منظر والی تصاویر لینے میں مدد دیتے ہیں، جیسا آئی فون میں ہوتا ہے۔

اسی طرح بیک پر سولہ میگا پکسل کیمرہ دیا گیا ہے۔

ان فونز میں ایس ایٹ اور نوٹ ایٹ کی طرح انفٹنی ڈسپلے ڈیزائن دیا گیا ہے، یعنی زیادہ اسکرین اور بہت کم بیزل

اے ایٹ 5.6 انچ ڈسپلے کے ساتھ ہے جبکہ اے اے 8 پلس کی اسکرین 6 انچ کی ہے، دونوں میں 1080x2220 پکسل سپر امولیڈ ڈسپلے ہے۔

یہ فون بھی ایس ایٹ اور نوٹ ایٹ کی طرح واٹر اور ڈسٹ ریزیزٹنٹ ہے، تاہم کمپنی نے اس میں اینڈرائیڈ اوریو کی بجائے اینڈرائیڈ نوگیٹ آپریٹنگ سسٹم دیا ہے۔

فون میں اوکٹا کور 2.2 گیگا ہرٹز پرسیسر دیا گیا ہے جبکہ اے ایٹ میں فور جی بی ریم اور اے ایٹ پلس میں سکس جی بی ریم دی گئی ہے۔

دونوں فونز میں 32 سے 64 جی بی اسٹوریج ہے جسے مائیکرو ایس ڈی کارڈ سے 256 جی بی تک بڑھایا جاسکتا ہے، یو ایس بی سی اور 3000 ایم اے ایچ بیٹری ہے۔

یہ فون اگلے مہینے صارفین کو دستیاب ہوں اور ان کی قیمت کا اعلان تو نہیں کیا گیا تاہم اے 7 کی قیمت پچاس ہزار روپے سے زائد تھی تو اے ایٹ کی بھی یہی ہوسکتی ہے۔