25089

چھٹیاں ہی چھٹیاں

ہم من حیث القوم چھٹیوں کے بہت شوقین واقع ہوئے ہیں‘ بات بات پر حکومت سے چھٹی کی توقع رکھنا ہماری سرشت میں شامل ہے ‘کیا آپ نے کبھی اندازہ لگایا ہے کہ سال میں ہم کتنی چھٹیاں مناتے ہیں اور کتنے دن کام کرتے ہیں ؟ کیا آپ نے کبھی یہ جاننے کی کوشش کی ہے کہ اگر ملک میں صرف ایک دن کام کاج بند رہے تو ملکی معیشت کو کتنے ارب روپے کادھچکا لگتا ہے آئیے پہلے آپ کی تفریح طبع کیلئے آپ کو ایک قصہ سنائیں شاید اسے پڑھنے کے بعد آپ کو اندازہ ہو جائے کہ ہم کتنی محنت کر رہے ہیں اور کتنا آرام‘ ایک مرتبہ ایک ادارے کے ایک اہلکار نے جب یہ محسوس کیا کہ اس کی ملازمت کو ایک سال بیت چلا نہ ہی اس کے باس نے کبھی اس کی پروموشن کی بات کی ہے اور نہ ہی کسی سالانہ انکریمنٹ کی تو وہ اسے یہ بات باور کرانے کیلئے اس کی خدمت میں پیش ہوا‘ ان دونوں کے درمیان جو مکالمہ ہوا وہ کچھ اس طرح تھا۔ اہلکار‘ جناب مجھے اپنی موجودہ اسامی پر کام کرتے ہوئے ایک سال بیت چکا ہے لیکن نہ اب تک میری تنخواہ میں اضافہ کیا گیا ہے اور نہ ہی مجھے پروموشن کا عندیہ دیاگیا ہے ۔باس: لیکن تم نے تو سال بھر ایک دن بھی کام نہیں کیا‘ اہلکار بھلا وہ کیسے؟ باس یہ بتاؤ سال میں کتنے دن ہوتے ہیں؟ اہلکار 365 دن‘ باس کیا تم ویک اینڈ پر دفتر آتے ہو؟ اہلکار‘ نہیں ‘ باس سال میں کتنے ویک اینڈ ہوتے ہیں‘ اہلکار ‘52 سینچر اور 52 اتوار جو ملا جلا کر 104 دن بن جاتے ہیں باس اگر تم ان 104 دنوں کو سال کے 366 دنوں سے منہا کردو تو باقی کتنے دن بچ جاتے ہیں؟ اہلکار ‘ 262 دن ‘باس دن میں کتنے گھنٹے ہوتے ہیں؟ اہلکار24 گھنٹے‘باس تم دن میں کتنے گھنٹے کام کرتے ہو؟ اہلکار دس بجے صبح سے شام 6 بجے تک یعنی کل آٹھ گھنٹے ‘باس ‘ اب ذرا یہ بتاؤ کہ ان24 گھنٹوں میں روزانہ جو تم کام کرتے ہو وہ ان کا کتنا حصہ بنتا ہے ؟اہلکار 24 گھنٹوں میں8 گھنٹوں کا مطلب ہوا ایک تہائی یعنی1/3 باس ‘ اب بتاؤ 262 دنوں کا1/3 کیا بنا؟ اہلکار87 دن باس میں تم کو ہر سال 2 ہفتوں کی میڈیکل کی چھٹی دیتا ہوں‘

19 دنوں کی Casual چھٹی دیتا ہوں 30 دن کی Earned leaveدیتا ہوں اب ذرا ان چھٹیوں کو گن کر جو64 بنتی ہیں انہیں تم87 دنوں سے منہا کرو تو باقی کتنے دن بچے؟ اہلکار23 دن باس ‘ کیا تم تہو اروں کے دن کام کرتے ہو جو سال میں20 دن بنتے ہیں ‘ اہلکار نہیں سر باس کیا تم یوم آزادی کے دن دفترآتے ہو؟ ‘ اہلکار نہیں ‘ باس کیا تم رپبلک ڈے پر کام کرتے ہو؟ اہلکار نہیں ‘ باس کیا تم نیو ائیر ڈے پر کام کرتے ہو؟ اہلکار نہیں ‘ باس اب بتاؤ کتنے دن بچے؟اہلکار کوئی بھی نہیں ‘ باس تو پھر تم کس بنیاد پر انکریمنٹ کا مطالبہ کرتے رہے ہو تم تو الٹا ادارے کو چونا لگا رہے ہو۔ اس لمبی تمہید کا مقصد یہ تھا کہ ہمارے سرکاری اور نیم سرکاری اداروں کے اہلکاروں کو ہر سال مختلف وجوہ کی بنیاد پر اچھی خاصی چھٹیاں مل جاتی ہیں اکثر لوگوں کا تو یہ خیال ہے کہ یہ جو ہم اپنے اسلاف کے یوم پیدائش یا یوم وفات کے موقع پر چھٹیاں کرتے ہیں اگر ہم ان ایام میں روزانہ کے مقابلے میں دو دو گھنٹے زیادہ کام کریں تو کیا یہ ان کو خراج عقیدت اور خراج تحسین پیش کرنے کا بہتر طریقہ نہ ہو گا؟ ہمارے اکابرین تو بڑے جفاکش اور محنتی لوگ تھے ان کی روح کو تویہ جان کر خوش ہو گی کہ ان کے پیروکار بھی بڑے محنتی ہیں۔ آج کی دنیا مقابلے کی دنیا ہے آج وہ لوگ کامیاب ہوتے ہیں جو صرف محنت اور لگن پر یقین رکھتے ہیں جو صرف دیانتداری سے کام کرتے ہیں۔