222

پاکستان کی امداد روکی نہیں معطل کی گئی ہے،امریکہ 

واشنگٹن۔ امریکی محکمہ دفاع کے ترجمان کرنل راب میننگ نے کہا ہے کہ پاکستان کی امداد روکی نہیں معطل کی گئی ہے جس کی بحالی کے لیے پاکستان کو دہشت گردی کے خلاف ٹھوس اقدامات اٹھانے ہوں گے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق واشنگٹن میں میڈیا بریفنگ کے دوران امریکی محکمہ دفاع پینٹاگون کے ترجمان کرنل راب میننگ نے کہا کہ پاکستان دہشت گردی کیخلاف فیصلہ کن کارروائی کرے۔ پاکستان سے ہمیں بڑی توقعات ہیں، ہم چاہتے ہیں کہ طالبان، حقانی نیٹ ورک اور افغانستان میں دہشتگرد حملوں کی منصوبہ بندی کرنے والوں کو پاکستان میں محفوظ پناہ گاہیں نا ملیں اور نا ہی وہ پاکستانی سرزمین سے کارروائیاں کرسکیں۔

پینٹاگون کے ترجمان کا کہنا تھا کہ امریکا نے پاکستان کی فوجی امداد روکی نہیں معطل کی ہے، امداد کی بحالی کے لیے پاکستان کو دہشتگردی کیخلاف ٹھوس اقدامات اٹھانے ہوں گے، اس سلسلے میں پاکستان کو ان تمام اقدامات سے متعلق آگاہ کردیا گیاہے جو وہ اٹھا سکتا ہے۔ امریکا دہشت گرد گروپوں کے خلاف بلا امتیاز کارروائی کے لیے پاکستان کے ساتھ کام کرنے کے لیے تیار ہے اور اس کے لئے ہم پاکستانی حکومت کے ساتھ غیررسمی بات چیت کرتے رہیں گے۔

کرنل راب میننگ نے دہشت گردی کی جنگ میں پاکستان کی قربانیوں کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ داعش کے خلاف کارروائیوں میں امریکا اور اتحادیوں کے ہلاک ہونے والے مجموعی فوجیوں سے زیادہ پاکستان نے اپنے فوجیوں کی جانیں قربان کی ہیں۔