232

نیب کا پانامہ مواد حاصل کرنے کیلئے سپریم کورٹ سے رجوع

اسلام آباد ۔ نیب نے پاناما کیس سے متعلق مواد حاصل کرنے کے لیے سپریم کورٹ سے رجوع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔سپریم کورٹ نے پاناما کیس کے 28 جولائی کے فیصلے میں نوازشریف کو نااہل قراردیا جس کے بعد وہ وزارت عظمیٰ سے سبکدوش ہوگئے۔پاناما کیس کے فیصلے کی روشنی میں نوازشریف، ان کی صاحبزادی مریم نواز، صاحبزادوں حسین، حسین نواز، داماد کیپٹن (ر) صفدر اور اسحاق ڈار کے خلاف احتساب عدالت میں ریفرنسز دائر کیے جن میں تمام افراد پر فرد جرم عائد ہوچکی ہے۔

نجی ٹی وی کے مطابق قومی احتساب بیورو (نیب) نے پاناما سے متعلق مواد حاصل کرنے کے لیے سپریم کورٹ سے رجوع کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس کے لیے درخواست بھی تیار کرلی گئی ہے۔ذرائع کے مطابق نیب کی جانب سے تیار کردہ درخواست کے متن میں کہا گیا ہے کہ احتساب عدالت میں زیر التوا ریفرنسوں کے سلسلے میں مصدقہ رکارڈ دیا جائے۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ واجد ضیاء شریف خاندان کے خلاف تینوں ریفرنسوں میں اہم گواہ ہیں، نیب نیایون فیلڈ میں ضمنی ریفرنس بھی تیار کر رکھا ہے، ضمنی ریفرنس میں تین مزید گواہان کی فہرست دی جائے گی۔درخواست میں بتایا گیا ہے کہ فلیگ شپ ریفرنس کے معاملے پر نیب کی تین رکنی ٹیم اتوار کو ڈی جی نیب راولپنڈی ظاہر شاہ کی سربراہی میں لندن جائیگی، دورے کا مقصد باہمی معاونت سے متعلق قانون کیتحت ثبوت حاصل کرنے ہیں۔واضح رہے کہ شریف خاندان کے خلاف لندن پراپرٹیز، العزیزیہ اسٹیل مل اور فلیگ شپ انویسٹمنٹ کے ریفرنسز دائر کیے گئے ہیں جب کہ اسحاق ڈار کے خلاف ا?مدن سے زائد اثاثوں کا ریفرنس بنایا گیا ہے۔