بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / سینیٹ اجلاس،4 لاکھ سے زائد پختونوں کے شناختی کارڈ بلاک ہونے کیخلاف شدید احتجاج

سینیٹ اجلاس،4 لاکھ سے زائد پختونوں کے شناختی کارڈ بلاک ہونے کیخلاف شدید احتجاج


اسلام آباد۔ ملک بھر میں چار لاکھ سے زائد پختونوں کے شناختی کارڈ بلاک ہونے پر سینٹ میں شدید احتجاج کیا گیا ، اراکین سینٹ نے پختونوں کے ساتھ شناختی کارڈ بلاک کرنے کے معاملے پر حکومت کو فوری اقدامات اٹھانے کا مطالبہ کیا ہے ۔ سینیٹر عثمان خان کاکڑ نے کہا کہ شناختی کارڈز کے حوالے سے کئی مرتبہ کہا لیکن کوئی جواب نہیں ملا کہا جارہا ہے کہ ابھی چار لاکھ سے زائد شناختی کارڈبلاک ہیں جن میں سے نوے فیصد پختون لوگوں کے ہیں ملک میں پگڑی اور داڑھی والے لوگوں کے شناختی کارڈ بلاک کردیئے جاتے ہیں ۔

موجودہ حکومت پختونوں سے امتیازی سلوک کررہی ہے جن لوگوں کے شناختی کارڈ بلاک ہیں وہ نہ بچوں کو سکول بھیج سکتے ہیں اور نہ ہی بینک سے پیسے لے دے سکتے ہیں بلاک کئے گئے شناختی کاروڈوں کا طریقہ کار ہوتا ہے لیکن ان پر کوئی تحقیق نہیں کی جاتی انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے وزارت داخلہ حکام سے کئی میٹنگ بھی کی ہیں لیکن کوئی جواب نہیں ملتا ہم ملک کے شہری ہیں جن کو نہیں مانا جارہا ہے