بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / پاناما کیس؛ وزیراعظم کی تقاریر اور عدالت میں پیش موقف میں تضاد پر وضاحت طلب

پاناما کیس؛ وزیراعظم کی تقاریر اور عدالت میں پیش موقف میں تضاد پر وضاحت طلب

 اسلام آباد۔ سپریم کورٹ نے پاناما لیکس کیس میں وزیراعظم نواز شریف کی تقاریر اور عدالت میں پیش کئے گئے موقف میں تضاد پر وضاحت طلب کر لی۔

سپریم کورٹ میں پاناما کیس کی سماعت جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں 5 رکنی لارجر بنچ نے کی۔ سماعت کے دوران وزیراعظم نواز شریف کے وکیل مخدوم علی خان نے بینک ٹرانزیکشن کے حوالے سے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ تمام ٹرانزیکشن بینک کے ذریعے ہوئیں اور بچوں کو تمام تحائف بینک کے ذریعے دیئے گئے۔

جبکہ ٹیکس بینک کے علاوہ ادائیگیوں پر لاگو ہوتا ہے۔ مخدوم علی خان نے عدالت کو یہ بھی بتایا کہ حسین نواز ٹیکس دیتے ہیں اور اُن کا نیشنل ٹیکس نمبر بھی موجود ہے اور اِس حوالے سے اُن پر لگائے گئے تمام الزامات جھوٹ پر مبنی ہیں۔ مریم نواز والد کے زیرِ کفالت نہیں ہیں جبکہ وزیراعظم نے مریم نواز کو تحائف بینکوں کے ذریعے دیئے۔