بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / قومی اسمبلی ہنگامہ آرائی ،سپیکرایازصادق کی مستعفی ہونے کی پیشکش

قومی اسمبلی ہنگامہ آرائی ،سپیکرایازصادق کی مستعفی ہونے کی پیشکش

اسلام آباد۔ سپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے پارلیمانی جماعتوں کو ایوان میں پیدا ہونے والی کشیدگی کے تناظر میں مستعفی ہونے کی پیش کش کردی ‘ پارلیمانی جماعتوں سے کہا ہے کہ اگر وہ ان سے مطمئن نہیں تو وہ وزیراعظم سے بات کر کے ان کواپنا استعفیٰ بھیج دیتے ہیں ۔سپیکر نے بعض جماعتوں کی تنقید پر پارلیمانی قائدین کے اجلاس میں اس استعفی کی پیش کش کی اور عوامی مسلم لیگ کے صدر شیخ رشید نے میڈیا سے بات چیت میں سپیکر کے مستعفی ہونے کی پیش کش سے آگاہ کیا۔شیخ رشید نے کہا کہ مشاورتی اجلاس میں بھی واضح کیا ہے کہ سپیکر ایوان کو جانبداری سے چلا رہے ہیں ساڑھے تین سالوں میں اپوزیشن کی کوئی تحریک استحقاق نہیں لی گئی وہ وزراء کی طرف دیکھ کر فیصلے کریں گے۔

تو ایوان کیسے چلے گا سپیکر نے پارلیمانی قائدین کے اجلاس میں کہا ہے کہ وہ استعفیٰ دینے کو تیار ہیں اور اپنا استعفیٰ وزیراعظم کو بھجوا دیتے ہیں سردار ایاز صادق کو غیر جانبداری سے ایوان چلانے کی جرات ہی نہیں ہے وہ جمہوریت اسمبلی اور اپوزیشن کسی کا ساتھ نہیں دیتے بے یقینی ان کی وجہ سے پیدا ہوتی ہے وزراء کو دیکھ کر اسمبلی نہیں چلائی جاتی انہوں نے اس بارے میں سابق سپیکر سید یوسف رضا گیلانی کی مثآل دی اور کہا کہ 1990 کی دہائی میں اس وقت کی حکومتی جماعت پیپلز پارٹی کے شدید دباؤ کے باوجوداس دور میں ایوان میں پیش ہونے والے ناخوشگوار واقعہ کے سپیکر نے انہیں طلب نہیں کیا تھا۔