بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / خیبر پختونخو ا میں یوتھ پالیسی سے نوجواں کو ترقی کے مواقع ملیں گے ‘ پرویز خٹک

خیبر پختونخو ا میں یوتھ پالیسی سے نوجواں کو ترقی کے مواقع ملیں گے ‘ پرویز خٹک

وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے حیات آباد سپورٹس کمپلیکس کیلئے دو عدد بیڈ منٹن ٹرف، ایک عدد ہال برائے باسکٹ بال اور والی بال، ایک سوئمنگ پول، کرکٹ گراؤنڈ میں فلڈ لائٹس اور ایڈونچر کلب کے قیام کا اعلان کیا ہے اور کہا ہے کہ خیبرپختونخوا حکومت ، چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان کے نوجوانوں سے کئے گئے وعدوں کی تکمیل کیلئے کامیابی سے گامزن ہے۔جب ہم نے حکومت سنبھالی تو نوجوانوں کی سرگرمیوں اور بہبود کے لئے کوئی فنڈز سالانہ ترقیاتی پروگرام میں مختص نہیں تھے ۔ پہلی بار 2014-15 میں یوتھ افیئر ز کے لئے اے ڈی پی میں 20.00 ملین روپے رکھے گئے جبکہ موجودہ سال 2015-16 میں اس رقم کو بڑھا کر 50.00 ملین کر دیا گیا ۔ اس کے علاوہ “جوان مرکز” کے قیام کے لئے ایک ارب روپے کی خطیر رقم مختص کی گئی ہے۔
نوجوانوں کے لئے ایک علیحدہ یوتھ افیئزز ڈائریکٹریٹ بنانے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے ۔صوبائی حکومت صوبے بھر میں کھیلوں کے فروغ کیلئے ایک خود مختار باڈی بنارہے ہیں ۔ وہ حیات آباد سپورٹس کمپلیکس میں انڈر23 گیمز کی تقریب رونمائی سے خطاب کررہے تھے۔ چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان اورصوبائی وزیر کھیل ،ثقافت و اُمور نوجوانان محمود خان نے بھی تقریب سے خطاب کیاجبکہ صوبائی وزاء، اراکین قومی و صوبائی اسمبلی،سیکرٹری محکمہ کھیل ،ثقافت و اُمور نوجوانان اور نوجوانوں نے بھی شرکت کی ۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ صوبائی حکومت نوجوانوں کیلئے رہنما اُصولوں پر مشتمل یوتھ پالیسی کا اعلان کر چکی ہے۔ جس کے ذریعے نوجوانوں کو ترقی کے وسیع مواقع فراہم کئے جائیں گے۔ نوجوانوں کو فیصلہ سازی کا موقع دینے کی غرض سے پالیسی میں یوتھ کمیشن بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے جس سے نوجوان خود اپنے فیصلے کرنے میں با اختیار ہوں گے۔76
تحصیلوں میں گراؤنڈز کی تعمیر کا عمل جاری ہے ۔پہلے مرحلے میں میں 60 گراؤنڈز کی منظوری دی گئی تھی، جن میں سے 34 مکمل ہو کر محکمے کے زیر استعمال آچکے ہیں۔ مزید میدانوں کی بروقت تکمیل کیلئے محکمے کو اس سال تمام فنڈز جاری کئے جا چکے ہیں۔ باقی ماندہ 16 گراؤنڈز مارچ تک منظور کر لئے جائیں گے۔ خستہ حال میدانوں کی مرمت و آباد کاری کے منصوبے کے تحت کل 44 کھیل کے میدانوں کی مرمت کی جارہی ہے۔ جن میں سے 20 مکمل کئے جا چکے ہیں جبکہ باقی ماندہ 24 گراؤنڈز اس سال جون تک مکمل کرلئے جائیں گے۔
وزیراعلیٰ نے کہاکہ ہر ڈویژن کی سطح پر پشاور سپورٹس کمپلیکس کی طرح کمپلیکس کی تعمیرکے منصوبے کے تحت ایبٹ آباد میں سپورٹس کمپلیکس کیلئے 203 ملین روپے،کوہاٹ سپورٹس کمپلیکس175 ملین روپے،مردان رستم سپورٹس کمپلیکس 244 ملین روپے، صوابی سپورٹس کمپلیکس 200 ملین روپے، نوشہرہ multi -purpose جمنازیم233ملین روپے،سوات سپورٹس کمپلیکس کیلئے 500 ملین روپے اور چارسدہ سپورٹس کمپلیکس کیلئے 24 کروڑ روپے کی منظوری دی جا چکی ہے۔
وزیراعلیٰ نے کہاکہ جو منصوبے پچھلے دور حکومت میں صرف منظور ہو ئے تھے ،ہماری حکومت نے ڈھائی سال کی قلیل مدت میں مکمل کئے ہیں ۔ ان میں حیات آباد سپورٹس کمپلیکس209 ملین روپے، عبد الولی خان کمپلیکس492 ملین روپے اور مردان ہاکی ٹرف76 ملین روپے کی لاگت سے مکمل ہوئے۔انہوں نے کہاکہ وزیر باغ میں119 کنال اراضی پر ایک جدید سپورٹس کمپلیکس کی تعمیر کا منصوبہ بھی زیر غور ہے ۔جس کا فیز I فروری کے مہینے میں منظور کرلیا جائے گا۔ ارباب نیاز سٹیڈیم کو 70 کروڑ روپے کی لاگت سے خطے کا بہترین سٹیڈیم بنایا جا رہا ہے۔
کھیلوں کے فروغ کیلئے 200 ملین روپے کی لاگت سے وظیفے کا اجراء کیا گیا ہے ۔دریں اثناء وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے راک بال نیشنل چمپئن شپ میں نمایاں کامیابی حاصل کرنے والی خیبرپختونخوا کی ٹیموں کو سرٹیفکیٹس دیئے۔ خیبرپختونخوا کی لڑکوں کی ٹیم چمپئن شپ میں فاتح قرار پائی جبکہ لڑکیوں کی ٹیم نے تیسر ی پوزیشن حاصل کی۔فاتح ٹیم نے راک بال ایسوسی ایشن کے صدر ذوالفقار کی قیادت میں وزیراعلیٰ پرویز خٹک سے وزیراعلیٰ ہاؤس پشاور میں ملاقات کی اور انہیں اس نئے کھیل سے متعلق بریفینگ دی ۔وزیراعلیٰ نے اس نئے کھیل میں دلچسپی کا اظہار کیا اور کھلاڑیوں کی کارکردگی کو سراہا۔کھلاڑیوں کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہاکہ حکومت اس کھیل کے فروغ کیلئے ہر ممکن اقدامات کرے گی۔وزیراعلیٰ نے راک بال ایسوسی ایشن کے صدر ذوالفقار کو صوبائی محکمہ کھیل کے ساتھ رابطہ رکھنے کی ہدایت کی ۔