بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / دشمن عراق کی طرح پاکستان کو تباہ کرنے چاہتا ہے،سراج الحق

دشمن عراق کی طرح پاکستان کو تباہ کرنے چاہتا ہے،سراج الحق


لاہور ۔ امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ دشمن عراق کی طرح پاکستان کو تباہ کرنے چاہتا ہے‘ دشمن امت کو تقسیم کرنا چاہتا ہے اور جماعت اسلامی جوڑنا چاہتی ہے‘ دشمن نے ہماری سیاست اور تعلیمی اداروں کو یرغمال بنا رکھا ہے‘ دہشت گردی کے خاتمے میں اصل رکاوٹ حکمرانوں کی غلط پالیسیاں ہیں‘ حکمرانوں نے سودی نظام ختم کرنے کی بجائے اسے مضبوط کیا‘ ملکی دولت لوٹ کر اشرافیہ نے بیرون ملک منتقل کیا‘ بیس کروڑ عوام کرپشن سے پریشن ہیں۔ اتوار کو منصورہ میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سراج الحق نے کہا کہ کہ دہشت گردی کے خاتمے میں اصل رکاوٹ حکمرانوں کی غلط پالیسیاں ہیں، سابق صدر پرویز مشرف نے پاکستان کو دہشت گردی اور بدامنی کا تحفہ دیا جس کی وجہ سے ملک کو بھاری معاشی اور جانی نقصان اٹھانا پڑا، پوری قوم پرویز مشرف کی غلط پالیسیوں کا خمیازہ بھگت رہی ہے، پرویز مشرف کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے آج علما اور مدارس دہشت گردی کا نشانہ بن رہے ہیں اور اب تک اتنے لوگ شہید ہوچکے ہیں جتنے 65 اور 71 کی جنگوں میں بھی شہید نہیں ہوئے تھے۔

انہوں نے کہا کہ اسلام امن و اتحاد اور وحدت کا نام ہے اور پاکستان کے 95 فیصد عوام خلافت راشدہ کا نظام دیکھنا چاہتے ہیں لیکن اسلامی نظام نافذ کرنا حکمرانوں کا کام ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا پہلے دن سے مقف تھا کہ پاکستان کو افغانستان کے خلاف امریکا کا ساتھ نہیں دینا چاہیئے۔

دشمن امت کو تقسیم کرنا چاہتا ہے اور آج افغانستان سے لے کر لیبیا تک پورا خطہ بارود کی زد میں ہے، اسی دشمن نے ہماری سیاست اور تعلیمی اداروں کو بھی یرغمال بنا رکھا ہے۔ سراج الحق نے کہا کہ بیس کروڑ عوام کرپشن سے پریشان ہے جب کہ اشرافیہ نے ملکی دولت لوٹ کر بیرون ملک منتقل کر رکھی ہے، اگر 5 سے 6 ہزار لوگ جیلوں میں چلے جائیں تو ملک کا مستقبل روشن ہو سکتا ہے۔