بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / خیبر پختونخوا میں 80کروڑدرخت لگائے جا چکے ہیں – عمران خان

خیبر پختونخوا میں 80کروڑدرخت لگائے جا چکے ہیں – عمران خان


پاکستان تحریک انصاف کے چئیرمین عمران خان نے کہا ہے کہ فاٹا کے صوبہ خیبر پختونخوا میں انضمام سے سب سے زیادہ فائدہ فاٹا کو ہو گا کیونکہ یہاں کے لوگ سب سے زیادہ ترقیاتی کاموں سے محروم رہ گئے ہیں چونکہ صوبائی اسمبلی میں ان کی آواز نہیں تھی کہ جو ان کے حقوق کے لئے آواز بلند کرے مولانا فضل الرحمن فاٹا کے عوام کو خیبرپختونخوا میں انضمام کے حوالے سے عوام کو مزید بے وقوف نہیں بنا سکتے مولانا اور اس کی سیاست ماضی کا قصہ بن چکی ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے بھرتی مچن خیل بنوں میں سونامی بلین ٹریز پراجیکٹ کے تحت ہونے والی شجرکاری کے معائنہ کے موقع پرکیا انہوں نے کہا کہ جنگلات میں اضافہ کرنے کے لئے یہ منصوبہ پاکستان کے تاریخ کا سب سے بڑا منصوبہ ہے ۔ اور اس پراجیکٹ کے تحت اب تک صوبے میں 80کروڑ درخت لگائے گئے ہیں اور ہمارا ٹارگٹ ہے کہ ہم اس پراجیکٹ کے تحت ایک ارب درخت لگائیں گے جس سے صوبے میں معاشی انقلاب آئے گا اس سے آنے والی نسلوں کو فائدہ ہوگا اور اس سے پانچ لاکھ افراد کو روزگار بھی ملا ہے ۔
انہوں نے کہا کہ دہشت گردی سے پورے ملک میں سب سے زیادہ نقصان ہمارے صوبے اور فاٹا کو اٹھانا پڑا ہے جس کی تلافی ضروری ہے اور ضرورت اس امر کی ہے کہ فاٹا کو صوبے میں جلد سے جلد ضم کیا جائے اور وہاں پر ترقیاتی کام شروع کئے جائیں۔انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت آنے سے پہلے جنگلات پر ٹمبر مافیا کا قبضہ تھا ہم نے نہ صرف ان کے چنگل سے جنگلات کو محفوظ بنایا بلکہ ساٹھ ہزار کنال سرکاری زمین واگزار کرائی اور ان پر درخت لگائے جس کے فائدے ہمارے ائندہ نسلوں کو ملیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ فاٹا کا صوبے کے ساتھ انضمام کے علاوہ اور کوئی راستہ نہیں اب قومی اسمبلی کی طرح صوبائی اسمبلی میں بھی ان کے ممبران ہوں گے اور وہ ان کے حقوق کے لئے آواز اٹھائیں گے ۔
انہوں نے کہا کہ کرپشن کے خلاف جو جدوجہد ہم نے شروع کی ہے وہ اس وقت تک جاری رہے گی جب تک ہم اس کو منطقی انجام تک نہ پہنچائیں ۔ اس موقع ان کو سونامی بلین ٹریز پراجیکٹ کے حوالے سے بریفنگ دی گئی۔ان کی آمد کے موقع پر سیکورٹی کے سخت اقدامات اٹھائے گئے تھے ۔ دریں اثناء شرائے نورنگ کے مقام تورتلہ منجی والا میں گفتگو کرتے ہوئے تحر یک انصاف کے چےئر مین عمرا ن خان نے کہا ہے کہ ملک تر قی تب کر یگا جب سر کا ری پیسہ میٹر و بس اور او رینج ٹر ینو ں کی بجا ئے انسا نو ں پر خر چ ہو گا ، مر کزی حکو مت کی جا نب سے خیبر پختو نخوا کو ملنے والے فنڈ زمیں مسلسل کمی کی جا رہی ہے وہ بلین ٹر یز سا ئٹ کے معا ئنہ کے مو قع پر میڈ یا سے گفتگو کر رہے تھے انہو ں نے مز ید کہا کہ مر کزی حکو مت نے قوم کا پیسہ بے در دی سے تبا ہ کر دیا ہے پا کستان میں تر قی اور خو شحا لی تب آئے گی جب قوم کا پیسہ قوم ہی پر خر چ ہو گا نہ کے میٹر و بس اور اور ینج ٹر ینو ں پر انہو ں نے صو با ئی حکو مت کی کا ر کر دگی پر روشنی ڈالتے ہو ئے کہا کہ پا کستان کی تا ریخ میں کسی بھی صو بے نے تعلیم پر اتنے پیسے خر چ نہیں کئے جتنا کہ صو بائی حکو مت خر چ کر رہی ہے یہی وجہ ہے کہ خیبر پختو نخوا کے تعلیمی ادار ے نہ صرف پا کستان بلکہ پور ے ایشیا ء میں مثا لی ما نے جا تے ہیں اسی طر ح ہسپتا لو ں کا نظا م درست سمت جا رہا ہے چھو ٹے سے چھو ٹے علا قے میں ما ہر ڈاکٹرز تعینا ت ہیں ان کا کہنا تھا کہ در خت لگا نا بھی انسا نو ں کی خد مت ہے اور اسی جذ بے کے تحت ہم نے ایک کھرب در خت لگا نے کا پرا جیکٹ شروع کیا ہوا ہے جو کا میا بی کی جا نب بڑ ھ رہا ہے ۔