بریکنگ نیوز
Home / صحت / پھیپھڑے خون بھی بناتے ہیں، نئی دریافت

پھیپھڑے خون بھی بناتے ہیں، نئی دریافت


کیلیفورنیا۔ اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ پھیپھڑوں کا کام صرف ہوا کی آکسیجن جذب کرکے خون میں شامل کرنا اور خون کی کاربن ڈائی آکسائیڈ کو نکال باہر کرنا ہے تو آپ کی معلومات ادھوری ہیں کیونکہ اب سائنسدانوں نے تازہ انکشاف یہ کیا ہے کہ پھیپھڑے خون بھی بناتے ہیں۔

اس سے پہلے تک ہم یہی جانتے تھے کہ ہڈیوں کے گودے میں خون تیار ہوتا ہے لیکن یونیورسٹی آف کیلیفورنیا سان فرانسسکو (یوسی ایس ایف) کے ماہرین نے جب چوہوں پر تجربات کیے تو وہ یہ جان کر حیران رہ گئے کہ ان کے جسموں میں ’پلیٹلیٹس‘ نامی خلیے پھیپھڑوں کے اندر بھی بنتے ہیں۔ پھیپھڑوں میں خون کے یہ خلیات اس وقت تک جمع رہتے ہیں جب تک ہڈیوں کا گودا متاثر ہوکر خون بنانا نہ چھوڑدے۔

سائنس دانوں کے مطابق ہڈیوں کا گودا (بون میرو) خون کے تمام اجزا بنانے والا کارخانہ ہے جہاں آکسیجن سے بھرپور خون کے سرخ خلیات، انفیکشن سے لڑنے والے سفید خلیات اور زخم سے خون کا بہاؤ روکنے والے پلیٹلیٹس بنتے رہتے ہیں جبکہ اس عمل کو’ہیماٹوپوئسس‘ کہا جاتا ہے۔ اس سے پہلے پلیٹلیٹس بنانے والے خاص خلیات یعنی ’میگا کیریوسائٹس‘ پھیپھڑوں میں دریافت ہوچکے تھے لیکن ماہرین کا کہنا تھا کہ یہ بہت کم تعداد میں یہاں ہوتے ہیں جبکہ خون کے خلیات کی پیداوار کا اصل کام ہڈیوں کے گودے ہی میں ہوتا ہے۔