بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / کشمیریوں کو اقلیت میں تبدیل کرنا اقوام متحدہ کے چارٹر کی صریحاً خلاف ورزی ہے،پاکستان

کشمیریوں کو اقلیت میں تبدیل کرنا اقوام متحدہ کے چارٹر کی صریحاً خلاف ورزی ہے،پاکستان


اسلام آباد۔ پاکستان نے کشمیر میں بھارتی جارحیت کی شدید مذمت کرتے ہوئے عالمی برادری سے مقبوضہ کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں اور بھارت کی جانب سے کشمیریوں کو اقلیت میں تبدیل کرنے کو اقوام متحدہ کے چارٹر کی صریحاً خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے صورتحال کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ، پاکستان اپنے شہری ایاز جمالی کے جنوبی سوڈان میں اغواء ہونے کے بعد ایتھوپیا میں پاکستانی سفارتخانہ کے ذریعہ سوڈانی حکومت اور پاکستانی شہری کے خاندان کے ساتھ مسلسل رابطے میں ہے ، حسین حقانی کے حوالے سے وزارت داخلہ ہی بہتر بتا سکتا ہے ، افغانستان میں امن کے خواہاں ہیں ،طالبان رہنماؤں کی جانب سے پاکستان کے ساتھ افغانستان میں امن لانے کیلئے بات چیت کا میڈیا کے ذریعے علم ہوا ، ماسکو کانفرنس میں کون شریک ہوگا اس کا فیصلہ نہیں ہوا ، ۔

ان خیالات کا اظہار ترجمان دفتر خارجہ نفیس زکریا نے جمعہ کے روز میڈیا کو ہفتہ وار بریفنگ دیتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ بھارت کشمیر میں تحریک آزادی کو دبانے کی کوششوں میں مصروف ہے اور کشمیریوں میں پر ظلم کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے انہوں نے کہا کہ گزشتہ ہفتہ بھارت کی جانب سے تیس حریت رہنماؤں جن میں سید علی گیلانی ، میر واعظ عمر فاروق ، یاسین ملک اور دیگر رہنما شامل تھے کو بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں پاکستان کے دن کے مناسبت سے تقریب میں شرکت سے روکنے کیلئے نظر بند کردیا تھا بھارت کی جانب سے حریت رہنماؤں عالم بٹ کو 2010ء سے اکثر اوقات جیل میں رکھا گیا 160 سے زائد کشمیری نوجوانوں کو مقبوضہ کشمیر کے مختلف اضلاع سے گزشتہ ہفتہ گرفتار کیا گیا بھارت اقوام متحدہ کے چارٹر کی سنگین خلاف ورزی کرتے ہوئے کشمیریوں کو مقبوضہ کشمیر میں اقلیت میں تبدیل کرنے کیلئے دیگر علاقوں سے لوگوں کو آباد کررہا ہے انہوں نے عالمی برادری سے بھارتی جارحیت کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا اور انہیں اقوام متحدہ کی قراردادوں کے تحت حق خودارادیت دینے کا مطالبہ کیا مختلف سوالوں کے جواب دیتے ہوئے ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ جنوبی سوڈان میں پٹرولیم کمپنی میں کام کرنے والے پاکستانی انجینئر ایاز کو گزشتہ ہفتہ دیگر تین لوگوں کے ساتھ اغواء کیا گیا جبکہ اغواء کاروں سے مزاحمت پر جنوبی سوڈان کی سکیورٹی سٹاف کا اہلکار ہلاک بھی ہوا تھا ۔

انہوں نے کہا کہ اپنے شہری کی آزادی کیلئے پاکستانی سفارتخانے پیا سے کوششوں کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے پاکستان کی جانب سے اس سلسلہ میں جنوبی سوڈان اور ایاز جمالی کے بھائی کے ساتھ رابطہ میں ہیں انہوں نے کہا کہ ابھی تک کسی باغی گروپ کی جانب سے پاکستانی شہری اور دیگر اغواء ہونے والوں کی ذمہ داری قبول نہیں کی گئی ایک اور سوال کے جواب میں ترجمان نے کہا کہ وزیراعظم نواز شریف کو بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی جانب سے 23 مارچ کے موقع پر مبارکباد کا پیغام دیا گیا اور اس میں دونوں ممالک کے درمیان بات چیت کے سلسلہ کو دوبارہ بحال کرنے کے حوالے سے گفتگو نہیں ہوئی ہے انہوں نے کہا کہ بھارت خطے میں ہتھیاروں کی دوڑ چاہتا ہے اور پاکستان نے ہمیشہ ایک دوسرے کے ساتھ تمام امور کو بات چیت کے ذریعے حل کرنے پرزور دیتا رہے گا انہوں نے کہا کہ انسانی حقوق کے حوالے سے امریکی وزارت خارجہ کی رپورٹ میں پاکستان پر تنقید بلاجواز ہے اور پاکستان کی جانب سے ہمیشہ انسانی حقوق کے بین الاقوامی قوانین اور معاہدوں پر عملدرآمد کیا جارہ اہے جبکہ بھارت انسانی حقوق کے کشمیر میں سنگین خلاف ورزی کرنے کے باوجود ان پر تنقید کم کی گئی ہے ۔ ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ حسین حقانی کو جب وہ امریکہ میں پاکستان کے سفیر تھے اس وقت کے وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کی جانب سے ویزے جاری کرنے کے مخصوص اختیارات کے حوالے سے سوال پر وزارت داخلہ ہی بہتر جواب دے سکتا ہے۔

نفیس زکریا نے کہا کہ اپریل میں روس کے دارالحکومت ماسکو میں پاکستان کی جانب سے کون شریک ہوگا ابھی فیصلہ نہیں ہوا جبکہ طالبان کی جانب سے شرکت کے حوالے سے روس حکومت ہی بتا سکتی ہے انہوں نے کہا کہ طالبان رہنماؤں کی جانب سے پاکستان کے ساتھ افغانستان میں امن لانے کے حوالے سے بات چیت کا میڈیا کے ذریعے علم ہوا ہے ترجمان نے کہا کہ پاکستان افغانستان میں امن کا خواہاں ہے اور اس جانب ہر ممکن کوشش جاری رکھے گا انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کی جانب سے پاک افغان سرحد کھولنے کا حکم جذبہ خیر سگالی کے طور پر دیا انہوں نے امید کا اظہار کیا کہ اب افغان حکومت ایسے اقدامات اٹھائے گی جس سے وہاں دہشتگرد پاکستان داخل نہ ہوسکیں دونوں ممالک کو سرحد کے تحفظ کو مل جل کر اقدامات اٹھانے ہوں گے انہوں نے کہا جو لوگ افغانستان سے پاکستان کیخلاف بیان بازی کرتے ہیں وہ افغانستان کے امن لانے کیخلاف ہیں ترجمان نے کہا کہ بھارت ریاست اتر پردیش میں نئے وزیراعلیٰ کا اعلان ہونا بھارت کا اندرونی معاملہ ہے ۔