بریکنگ نیوز
Home / کھیل / شہریار خان کا بھارتی کرکٹ بورڈ کیخلاف قانونی چارہ جوئی کا اعلان

شہریار خان کا بھارتی کرکٹ بورڈ کیخلاف قانونی چارہ جوئی کا اعلان


لاہور۔چیئرمین پاکستان کرکٹ بورڈ(پی سی بی) شہریار خان نے باہمی سیریز کھیلنے سے انکار کرنے پر بھارتی کرکٹ بورڈ(بی سی سی آئی) کے خلاف قانونی کارروائی کا اعلان کردیا ہے، چیئرمین پی سی بی نے کہا کہ ہمارا کافی نقصان ہو چکا ہے اور کیس بھی بہت مضبوط ہے، اس لیے اب ہمارے پاس قانونی کارروائی کے سوا کوئی چارہ نہیں،

رواں سال جون میں بگ تھری کا فیصلہ ہو جائے گا، پی ایس ایل سیزن 2 کا آڈٹ شروع کرانے لگے ہیں تاکہ نفع و نقصان کا پتہ چل سکے،اگست 2018 میں مکمل طور پر کرکٹ بورڈ سے علیحدہ ہو جاؤں گا اور اس کے بعد کرکٹ بورڈ میں کسی بھی عہدے پر واپس نہیں آؤں گا،بگ تھری پر تمام ممالک نے اپنی اپنی تجاویز دے دی ہیں ، آئی سی سی کی اپریل اور جون میں ہونے والی میٹنگز میں بگ تھری کا فیصلہ ہو جائے گا،محمد عرفان نے بکیوں کی جانب سے رابطوں کااقرار کیا، باقی کھلاڑیوں نے سپاٹ فکسنگ سے انکار کیا ہے جس کی وجہ سے ان کا کیس ٹربیونل میں ہے۔پی سی بی ایگزیکٹو کمیٹی کی میٹنگ کے بعد پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے شہریار خان نے کہا کہ کہ انڈین کرکٹ بورڈ نے 2014 میں سیریز کھیلنے کا معاہدہ کیا لیکن پھر اسے توڑ دیا جس کے سبب ہمیں ملین ڈالرز کا نقصان ہوا۔انہوں نے کہا کہ ہمارا کافی نقصان ہو چکا ہے اور کیس بھی بہت مضبوط ہے، اس لیے اب ہمارے پاس قانونی کارروائی کے سوا کوئی چارہ نہیں۔

چیئرمین پی سی بی نے اپنی ریٹائرمنٹ کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ اگست 2018 میں مکمل طور پر کرکٹ بورڈ سے علیحدہ ہو جاؤں گا اور اس کے بعد کرکٹ بورڈ میں کسی بھی عہدے پر واپس نہیں آؤں گا ۔ یہ تمام چیزیں وزیر اعظم کو لکھ کر دے دی ہیں اور کہا ہے کہ جب بھی وہ مناسب سمجھیں میرا استعفیٰ قبول کرلیں۔بگ تھری کے معاملے پر گفتگو کرتے ہوئے شہریار خان کا کہنا تھا کہ بگ تھری پر تمام ممالک نے اپنی اپنی تجاویز دے دی ہیں ، آئی سی سی کی اپریل اور جون میں ہونے والی میٹنگز میں بگ تھری کا فیصلہ ہو جائے گا، بورڈ نے مجھے مینڈیٹ دیا ہے کہ بگ تھری ختم کرانے کیلئے کام کروں۔ بھارت اور سری لنکا کے علاوہ بگ تھری ارکان انگلینڈ اور آسٹریلیا سمیت تمام ممالک بگ تھری کے خاتمے پر رضا مند ہیں۔