بریکنگ نیوز
Home / اداریہ / کلبھوشن یادیو کو سزائے موت

کلبھوشن یادیو کو سزائے موت

بلوچستان سے گرفتار ہونے والے بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کو سزائے موت سنا دی گئی ہے خبر رساں ایجنسی کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے سزائے موت کی توثیق بھی کردی ہے بھارتی جاسوس کو سزا پاکستان کے خلاف جاسوسی اور تخریبی سرگرمیوں میں ملوث ہونے پر سنائی گئی کلبھوشن کو تین مارچ 2016ء کو بلوچستان میں آپریشن کے دوران گرفتار کیا گیا اس کا مقدمہ پاکستان آرمی ایکٹ کے تحت فیلڈ جنرل کورٹ مارشل میں چلایا گیا۔ مقدمے کی سماعت میں کلبھوشن یادیو پر عائد تمام الزامات ثابت ہوئے اس نے تسلیم کیا کہ اسے بھارتی ایجنسی ’’را‘‘ نے بھیجا تھا۔ اسے کراچی اور بلوچستان میں تخریبی کاروائیوں کا ٹاسک دیا گیا تھا۔ کلبھوشن کو دفاع کے لئے قانونی ماہر کی خدمات بھی فراہم کی گئی تھیں۔ پاکستان بھارتی مداخلت کے کئی دیگر ثبوت بھی فراہم کر چکا ہے دوسری جانب بھارت مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کو کچلنے کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہے مقبوضہ وادی میں دو نشستوں پر ہونے والے انتخابات میں ووٹنگ کے دوران احتجاجی مظاہرین پر بھارتی سیکورٹی فورسز کی فائرنگ سے 8کشمیری شہید ہوئے جبکہ درجنوں زخمی بھی ہیں۔

پاکستان نے مقبوضہ وادی میں بے گناہ کشمیریوں کی شہادت کی شدید مذمت کی ہے دریں اثناہمارے رپورٹر کی خصوصی رپورٹ کے مطابق افغانستان نے بھارتی دباؤ میں آکر پاکستان کے ساتھ آبی معاہدے پر خاموشی اختیار کرلی ہے اس معاہدے کا مقصد مستقبل میں پاکستان اور افغانستان کے درمیان آبی تنازعہ سے بچنا تھا۔ بھارت افغانستان میں 12ڈیموں کے ذریعے47لاکھ ایکڑ فٹ پانی ذخیرہ کرنے کے منصوبے پر عمل کر رہا ہے معاملہ بھارت کے ساتھ متنازعہ امور بات چیت کے ذریعے نمٹانے کا ہو یا افغانستان میں امن کے لئے کوششوں کا پاکستان کا کردار ریکارڈ کا حصہ ہے یہ بات بھی ریکارڈ پر ہے کہ بھارت ایک سے زائد مرتبہ پاکستان کے ساتھ مذاکراتی عمل کو عین وقت پر سبوتاژ کر چکا ہے اس سارے منظر نامے کا تقاضا ہے کہ عالمی برادری صورتحال کا نوٹس لیتے ہوئے بھارت کو اپنے رویے پر نظرثانی کا کہے۔

کرایہ داروں کے لئے نیا قانون

خیبر پختونخواپولیس نے کرائے پر مکان لینے والوں کے لئے نیا قانون بنانے کا فیصلہ کیا ہے یہ قانون جون2017ء سے نافذ ہوگا قانون کے تحت کرایہ دار کو متعلقہ مالک جائیداد اور علاقے کے تھانے سے این او سی لینا ہوگا جس میں ضمانت ہوگی کہ مذکورہ کرایہ دار کسی جرم میں ملوث نہیں۔ عوام کے جان و مال کے تحفظ کے لئے پولیس کی کوئی بھی حکمت عملی اس بات کی متقاضی ہوتی ہے کہ اسے بھرپور سپورٹ کیا جائے دوسری جانب اس برسرزمین حقیقت کو نہیں جھٹلایا جاسکتا کہ وطن عزیز میں پولیس سٹیشن جاکر این او سی لینا ایک مشکل ترین کام ہے مشکل کام کسی پراپرٹی ڈیلر یا پراپرٹی اونر سے سرٹیفیکیٹ لینا بھی ہے اور کوئی بھی اس ضمن میں کھلے دل کے ساتھ سرٹیفیکیٹ دیکر کسی کا ضامن بننے سے گریز ہی کرے گا۔ کیا ہی بہتر ہو کہ اس ضمن میں قدیم محلے دار کی جگہ موجودہ سسٹم میں منتخب ناظم اور دیگر بلدیاتی نمائندوں کو اختیارات دئیے جائیں جانچ پڑتال کہیں بھی ہو اس کے سارے عمل میں شریف شہریوں کی عزت نفس ہر حال میں مدنظر رکھنا ہوگی اس کے ساتھ بیک ڈور سے اس طرح کے این او سی کے اجراء کو روکنا بھی ناگزیر ہوگا۔