بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / سروسز ٹریبونل چیئرمین کی صدر مملکت کو درخواست

سروسز ٹریبونل چیئرمین کی صدر مملکت کو درخواست


پشاور۔ خیبر پختونخوا سروسز ٹریبونل کے چئیرمین اور سابق ایڈیشنل جج اسلام آباد ہائی کورٹ عظیم آفریدی نے صدر پاکستان ممنون حسین کواسلام آباد ہائی کورٹ میں جج مستقل نہ کرنے کے خلاف درخواست ارسال کر دی ہے ،جس میں استدعا کی گئی ہے کہ ان کی مستقلی کا کیس دوبارہ سے پارلیمنٹری کمیٹی برائے ججزتعیناتی کو بھیجا جائے درخواست گزار عظیم آفریدی کی درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ ان کا تعلق قبائلی علاقہ سے ہے اور2011 میں وہ فاٹا کے کوٹہ پر اسلام آباد ہائی کورٹ میں ایڈیشنل جج تعینات ہوئے تاہم بعدازاں 22 اکتوبر2012 کے جوڈیشل کمیشن کے اجلاس میں جوڈیشل کمیشن نے بعض ذاتی وجوہات کی بناء پران کا نام مستقل نہیں کیا اور جوڈیشل کمیشن نے اپنے فیصلہ کی توثیق پارلیمنٹری کمیٹی برائے ججزتعیناتی سے نہیں کروائی جو کہ آئین کے تحت ضروری اقدام ہے ۔

لہذا صدر پاکستان سے استدعا ہے کہ خواست گزار کی بحیثیت مستقل جج اسلام آباد ہائیکورٹ کیس دوبارہ سے پا رلیمنٹری کمیٹی برائے ججزتعیناتی کو بھیجا جائے اور اگرجوڈیشل کمیشن کی بدنیتی واضح ہو جائے تو درخواست گزار کو فاٹا کے کوٹہ پر مستقل جج اسلام آباد ہائیکورٹ تعیناتی کے احکامات دئیے جائیں واضح رہے کہ اس حوالے سے خیبر پختونخوا سروسز ٹریبونل کے چئیرمین اور سابق ایڈیشنل جج اسلام آباد ہائی کورٹ عظیم آفریدی نے اسلام آباد ہائی کورٹ اور پشاور ہائی کورٹ میں بھی رٹ پٹیشن دائر کی ہوئی ہے۔