بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / پی ٹی آئی نے الیکشن کمیشن کا دائرہ اختیار پھر چیلنج کر دیا

پی ٹی آئی نے الیکشن کمیشن کا دائرہ اختیار پھر چیلنج کر دیا

اسلام آباد۔الیکشن کمیشن آف پاکستان نے پی ٹی آئی غیر ملکی فنڈنگ کیس کی سماعت8کوئی پارٹی رکن ہویا نہ ہو، الیکشن کمیشن میں کوئی درخواست دائر نہیں کرسکتا کر دی ہے پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے ایک بار پھر الیکشن کمیشن کے دائرہ اختیارکو چیلنج کر دیا گیا ہے ۔سوموار کے روز چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں 5رکنی بنچ نے پی ٹی آئی پارٹی فنڈز کیس کی سماعت کی پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے ان کے وکیل انور منصور اوردرخواست گزار اکبر ایس بابر کے وکیل بھی الیکشن کمیشن میں پیش ہوئے اس موقع پر 160اکبر ایس بابر کے وکیل نے پی ٹی آئی کی رکنیت اور پارٹی سے نکالے جانے سے متعلق ریکارڈ الیکشن کمیشن میں جمع کراتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ میرے موکل کو سیکرٹری اطلاعات کے عہدے سے ہٹایا گیا۔

پارٹی سے نہیں نکالا گیاہے اورمیرے موکل اب بھی پی ٹی آئی کے رکن ہیں، انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی نے ممنوعہ ذرائع سے فنڈز اکٹھے کئے ہیں جس پر پی ٹی آئی کے وکیل نے کہاکہ اکبر ایس بابر کی اضافی دستاویزات ابھی موصول ہوئی ہیں ان دستاویزات کا جائزہ لیکر جواب دوں گاانہوں نے کہاکہ کوئی پارٹی رکن ہویا نہ ہو، الیکشن کمیشن میں کوئی درخواست دائر نہیں کرسکتاہے انہوں نے کہاکہ پارٹی فنڈز کیس الیکشن کمیشن کے دائرہ سماعت میں نہیں آتا ہے انہوں نے کہاکہ اکبر ایس بابر کے پارٹی کے خلاف بیانات کا ہمارے پاس بھی بہت مواد ہے، انہوں نے بیان دیا کہ میں فلاں فلاں کو سڑک پر لے آوں گ�آ اس موقع پر چیف الیکشن کمشنر نے کہاکہ الفاظ کے استعمال میں تو آپ بھی محتاط نہیں ہیں الیکشن کمیشن نے کیس کی سماعت 8مئی تک ملتوی کر دی ہے۔