بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / حکومت اور اپوزیشن کے مابین صوبائی اسمبلی میں محاذ گرم

حکومت اور اپوزیشن کے مابین صوبائی اسمبلی میں محاذ گرم


پشاور۔حکومت اور اپوزیشن کے درمیان صوبائی اسمبلی میں محاذ گرم ہوگیاہے وزیر اعظم کے خلاف قرارداد جمع کرائے جانے کے بعد اپوزیشن جماعتوں نے خیبر پختونخوا حکومت کو ٹف ٹائم دینے کے لئے وزیر اعلیٰ سمیت صوبائی وزیر خزانہ اور سپیکر اسد قیصر کیخلاف صوبائی اسمبلی میں تین قرارداد جمع کرادی ہے خیبر پختونخواحکومت نے وزیر اعظم نواز شریف سے مستعفی ہونے کے قرارداد کے بدلے میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کے پارلیمانی لیڈر سردار اورنگ زیب نلوٹھا نے سپیکر خیبر پختونخوا اسمبلی اسد قیصر ،اور جماعت اسلامی سے تعلق رکھنے والے صوبائی وزیر خزانہ مظفر سید کے خلاف قرارداد صوبائی اسمبلی میں جمع کردی ۔جبکہ پاکستان تحریک انصاف کے باغی رکن اور سابق صوبائی وزیر ضیاء اللہ آفریدی نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کے خلاف صوبائی اسمبلی سیکرٹریٹ میں قرارداد جمع کردی ہے ۔

گزشتہ روز پاکستان تحریک انصاف کے ڈپٹی پارلیمانی لیڈر شوکت یوسفزئی کے جانب سے خیبر پختونخوا اسمبلی میں وزیر اعظم نواز شریف سے مستعفی ہونے کے لئے قرارداد جمع کرائی گئی جس میں کہا گیا کہ وزیراعظم جے آئی ٹی پر اثر انداز ہونگے اسلئے ہم مطالبہ کرتے ہے کہ تحقیقات تک وزیراعظم اپنے عہدے سے مستعفی ہوجائیں جس خلاف پاکستان مسلم لیگ(ن) کے پارلیمانی لیڈر سردار اورنگ زیب نلوٹھا نے سپیکر اسد قیصر کے خلاف قرار داد میں موقف اختیار کیا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے چےئر مین کے قول فعل میں تضاد ہے ایک طرف عمران خان وزیر اعظم سے استعفیٰ کا مطالبہ کرتے ہیں مگر انکے اپنے سپیکر اسد قیصر پر کروڑوں روپے کرپشن کے الزمات اور قومی احتساب بیورو کے جانب سے انکوائری کے باوجود ان سے استعفیٰ نہیں لیا گیا ۔

دوسری قرارداد میں مطالبہ کیا ہے کہ امیر جماعت اسلامی سراج الحق ملک بھر میں کرپشن مکاوٗ تحریک چلارہے ہیں مگر انکے اپنے ہی وزیر مظفر سید پر بینک آف خیبر کے ایم ڈی کے جانب سے کرپشن کے الزامات لگانے کے باوجود انکے خلاف کوئی کاروائی نہیں ہوئی ،اسمبلی میں پاکستان تحریک انصاف کے باعی رکن ضیاء اللہ آفریدی نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک کے خلاف قرار داد میں میں کہا گیا کہ پاکستان تحریک انصاف کے منشور کے مطابق اور عمران خان کے وژن اور بیانات کے تناظر میں انتظامی ،آئینی عہدے پر ایک ملزم نہیں بیٹھ سکتا ہے اس وقت تک جب تک انکے اوپر لگائے گئے الزمات سے بر الزمہ نہ ہو ۔خیبر پختونخوا اسمبلی کا اجلاس دو مئی تک ملتوی کیا گیا تھا مگر پاکستان تحریک انصاف کے جانب سے وزیراعظم نواز شریف سے استعفیٰ لینے کے لئے جمع قرار داد کی وجہ سے اجلاس کو آج دو بجے طلب کیا گیا ہے۔
خیبرپختونخوا اسمبلی کا ہنگامی اجلاس آج طلب

پشاور۔خیبرپختونخوا اسمبلی میں وزیراعظم کے خلاف قرارداد لانے کیلئے اجلاس کاشیڈول تبدیل کردیاگیا۔دو مئی کو ہونے والا صوبائی اسمبلی کا اجلاس آج 25اپریل کو ہوگا۔ خیبرپختونخوااسمبلی کے آج کے اجلاس میں وزیراعظم نوازشریف سے مستعفی ہونے کامطالبہ کیاجائیگا۔ پاکستان تحریک انصاف کے شوکت یوسفزئی نے اسمبلی سیکریٹریٹ میں جمع کرائی گئی قراردادمیں کہاگیاہے کہ پانامالیکس پرسپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد نوازشریف اپنے عہدے پررہنے کاحق کھوچکے ہیں۔وزیراعظم کی موجودگی میں کیس سے متعلق تحقیقات کسی طور بھی شفاف نہیں ہوسکتی۔ لہذا شفاف اورآزادانہ انکوائری کے لیے وزیراعظم کا مستعفی ہونا ضروری ہے۔