بریکنگ نیوز
Home / انٹرنیشنل / بھارت میں جانوروں کو شناختی نمبر جاری کرنے پر غور

بھارت میں جانوروں کو شناختی نمبر جاری کرنے پر غور


نئی دہلی۔بھارتی حکومت نے انسانوں کے ساتھ ساتھ جانوروں کو بھی شناختی نمبر جاری کرنے پر غور شروع کردیا۔فرانسسیی خبر رساں ایجنسی کے مطابق بھارتی حکومت نے اپنی سپریم کورٹ کو بتایا ہے کہ وہ ملک میں موجود لاکھوں گائیوں کو خصوصی شناختی نمبر جاری کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔حکومت کا کہنا ہے کہ وہ ایسا اس لیے کررہی ہے تاکہ بھارت میں مقدس سمجھے جانے والے اس جانور کا تحفظ یقینی بنایا جاسکے۔سپریم کورٹ میں بھارتی حکومت نے موقف اختیار کیا کہ لاکھوں گائیوں کو خراب نہ ہونے والے پلاسٹک ٹیگز لگائے جائیں گے جن پر خصوصی شناختی نمبر درج ہوگا اور یہ نیشنل ڈیٹا بیس سے منسلک ہوگا تاکہ بھارت کے اندر اور بیرون ملک گائے کی اسمگلنگ کو روکا جاسکے۔

خیال رہے کہ بھارت میں گائے کو مقدس جانور کا درجہ دیا جاتا ہے اور کئی ریاستوں میں اسے ذبح کرنے اور گوشت استعمال کرنے پر سزائیں دی جاتی ہیں۔اس سلسلے میں حکومتی سطح پر بھی گائے کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لیے اقدامات اٹھائے جارہے ہیں۔بھارتی وزارت داخلہ کے ایک سینیئر افسر نے تیار کی جانے والی سفارشات سے متعلق اے ایف پی کو بتایا کہ ہر جانور کو خصوصی نمبر دیا جائے گا جس میں اس کی عمر، نسل، جنس، قد، رنگ، سینگوں کی ساخت اور کسی خصوصی نشان کی تفصیلات درج ہوں گی۔واضح رہے کہ بھارت میں جانوروں کے حقوق کے لیے کام کرنے والی ایک تنظیم کی جانب سے سپریم کورٹ میں پٹیشن دائر کی گئی تھی جس کے بعد نریندر مودی کی حکومت نے وزارت داخلہ کے ایک پینل کو سرحد پار اسمگلنگ روکنے کے لیے سفارشات مرتب کرنے کا کام سونپا تھا۔

بھارتی وزارت داخلہ کے اعداد و شمار کے مطابق ایک لاکھ 75 ہزار جانور ہر سال بھارت کے ساتھ منسلک بنگلہ دیش اور نیپال کی سرحدوں کے قریب پکڑے جاتے ہیں جبکہ غیر سرکاری اعداد کے مطابق سالانہ تقریبا 20 لاکھ جانوروں کا غیر قانونی کاروبار ہوتا ہے۔