بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / 17 ارب روپے کرپشن کیس کی سماعت

17 ارب روپے کرپشن کیس کی سماعت


کراچی۔سابق مشیرپیٹرولیم ڈاکٹرعاصم حسین نے کہا ہے کہ عابد شیر نے مجھے جو بھی کہنا ہے میرے سامنے آکر کہیں پھر ان کے بارے میں بتاوں گا ،منگل کو کراچی کی احتساب عدالت میں جے جے وی ایل میں 17 ارب روپے کی مبینہ کرپشن کی سماعت ہوئی۔ سابق مشیر پیٹرولیم ڈاکٹرعاصم کے وکیل نے موقف پیش کیا کہ کیس کے حوالے سے ہمیں تاحال کوئی دستاویزات فراہم نہیں کی گئیں اس ریفرنس میں جان بوجھ کر ڈاکٹرعاصم کا نام بھی شامل کیا گیا ہے اور ہمارے اعتراضات کی وجہ سے ہی ڈاکٹرعاصم و دیگر پر فرد جرم عائد نہیں ہوئی۔

وکیل نے کہا کہ دستاویزات کی عدم فراہمی کی درخواست پہلے سے دائر کی جاچکی ہے اس درخواست پر مزید دلائل دینا چاہتے ہیں، ان کا کہنا تھا کہ ہم ثابت کریں گے کہ کیس سیاسی ہے اس کیس میں فرد جرم عائد ہو ہی نہیں سکتی اس لئے سماعت ملتوی کی جائے۔ عدالت نے آئندہ سماعت پر ملزمان کے وکلا کو کیس پر دلائل دینے کا حکم دیتے ہوئے سماعت 5 مئی تک ملتوی کردی۔اس سے قبل سابق مشیر پیٹرولیم نے میڈیا سے غیررسمی گفتگو بھی کی۔

عمران خان کے الزامات کے حوالے سے ڈاکٹر عاصم کا کہنا تھا کہ عمران خان کی بہت عزت کرتا ہوں لیکن وہ اپنی عادت سے مجبور ہیں وہ خود نہیں بلکہ کسی کا بتایا ہوا بولتے ہیں اور بولنے اور ایکشن کے بعد سوچتے ہیں میں ان کی باتوں کا برا نہیں مانتا۔ایک سوال کے جواب میں ڈاکٹر عاصم نے کہا کہ عابدشیرعلی سے کہیں وہ میرے سامنے آئیں اور انہوں نے مجھ سے جو ڈیل کی تھی پہلے اس کا جواب دیں ورنہ میں خود بتاوں گا۔ انہوں نے کہا کہ میڈیا نے میری امامت کے حوالے سے ایک واویلا مچا رکھا ہے میری امامت کو سیاسی رنگ نہ دیا جائے ہرمسلمان کے پیچھے نماز پڑھی جاسکتی ہے۔