بریکنگ نیوز
Home / انٹرنیشنل / ٹرمپ کی بیٹی باپ کے دفاع کیلئے میدان میں

ٹرمپ کی بیٹی باپ کے دفاع کیلئے میدان میں

برلن۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی بیٹی ایوانکا ٹرمپ نیجرمنی میں خواتین سے متعلق اپنے والد کے موقف کا دفاع کیا ہے جس پر انھیں شدید شور شرابے کا سامنا کرنا پڑا۔غیرملکی میڈیا کے مطابق جرمنی میں جاری خواتین کے جی -20 اجلاس میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی بیٹی ایوانا ٹرمپ نے جب خواتین سے متعلق اپنے والد کے رویے کا دفاع کیا تو انھیں شدید شور شرابے کا سامنا کرنا پڑا۔یہ واقعہ جرمنی کے دارالحکومت برلن میں جاری خواتین کے جی -20 اجلاس میں پیش آیا۔ اس دو روزہ کانفرنس میں دنیا کے سب سے امیر20 ممالک کے نمائندے شرکت کر رہے ہیں لیکن فرق یہ ہے کہ یہ کانفرنس عورتوں کے لیے اور ان ہی کے متعلق ہے اسی لیے اسے ڈبلیو 20 یا وومن 20 سمٹ کہا جار رہا ہے۔

ایوانا ٹرمپ خواتین صنعت کاروں پر ہونے والے پینل ڈسکشن میں جرمنی کی چانسلر انجیلا میرکل اور بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کی صدر کرسٹین لیگارڈ کے ساتھ شریک تھیں۔جب انھوں نے کہا کہ ان کے والد خواتین کی عزت کرتے ہیں اور خاندان کے تصور میں یقین رکھتے ہیں تو لوگوں نے شور مچا کر ان سے اختلاف کا اظہار کیا۔خیال رہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کو خواتین کے متعلق ان کے رویے کے لیے کافی بار تنقید کا سامنا کرنا پڑا ہے۔گذشتہ سال امریکی صدارتی انتخاب کے لیے مہم کے دوران ان کا ایک پرانا ٹیپ ریلیز ہوا تھا جس میں وہ خواتین کے لیے نامناسب بات کہتے ہوئے نظر آئے تھے۔اس کے بعد امریکہ کے علاوہ دنیا بھر میں ان کے خلاف مظاہرے ہوئے تھے۔

لیکن جی 20 کے خواتین اجلاس میں ایوانا نے کہا: ‘میں نے اپنے والد پر ہونے والی تنقید سنی ہے، لیکن میں انھیں اس طور پر نہیں جانتی۔ میں نے ہی کیا، وہ تمام خواتین جو ان کے ساتھ، ان کی کمپنی میں کام کر چکی ہیں وہ ان پر ہونے والی اس قسم کی تنقیدوں سے، ان باتوں سے اتفاق نہیں رھتیں۔ایوانا نے مزید کہا کہ ان کے والد نے ہمیشہ آگے بڑھنے کے لیے حوصلہ افزائی کی اور ان کے خاندان میں کسی قسم کی کوئی پابندی نہیں تھی۔خیال رہے کہ مارچ میں یہ اعلان کیا گیا تھا کہ ایوانا اپنے والد کی بلا معاوضہ اسسٹنٹ کے طور پر کام ریں گی۔