بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / پاکستان کا دہشتگردی معاملہ عالمی سطح پر اٹھانے کا فیصلہ

پاکستان کا دہشتگردی معاملہ عالمی سطح پر اٹھانے کا فیصلہ

اسلام آباد۔پاکستان نے کالعدم تحریک طالبان پاکستان اور جماعت الاحرار کے سابق ترجمان احسان اللہ احسان کے اعترافی بیان میں طالبان، بھارتی خفیہ ایجنسی ’’را ‘‘اور افغان خفیہ ایجنسی’’ این ڈی ایس‘‘ میں گٹھ جوڑ اور ملک دہشت گردی میں ملوث ہونے کا معاملہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل، افغانستان اور امریکا کے سامنے اٹھانے کا فیصلہ کیا ہے۔احسان اللہ احسان کے اعترافی بیان کے حوالے سے وزیراعظم کی منظوری سے اعلیٰ حکومتی حکام سفارتی سطح پر متعلقہ ممالک اور عالمی فورمز پر سفارتی رابطے کریں گے جبکہ اس اعترافی بیان اور ثبوتوں کی روشنی میں پاکستان امریکا اور افغانستان سے مطالبہ کرے گا کہ افغان سرزمین پر موجود تمام ایسے کالعدم تنظیموں اور گروپس کے خلاف مذید سخت آپریشن کیا جائے جو پاکستان میں دہشت گردی کرنے میں بلاواسطہ یا بلواسطہ ملوث ہیں۔

اگر افغان حکومت نے اس حوالے سے فوری اقدام نہ کیے تو پاکستان افغانستان سے اپنے تعلقات کی حالیہ پالیسی پرنظرثانی کرسکتا ہے۔نجی ٹی وی نے وفاق کے اہم ترین ذرائع کے حوالے سے کہا ہے کہ پاکستان کے پاس بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کے بعد احسان اللہ احسان کے اعترافی بیان کی روشنی میں بھارت اور افغانستان کی خفیہ ایجنسیوں کے بارے میں مزید اہم ترین ثبوت آگئے ہیں جس سے یہ واضح ہوگیا ہے کہ دونوں ممالک کی خفیہ ایجنسیاں افغانستان میں ایسے کئی کالعدم گروپس کی معاونت کررہی ہیں جوپاکستان میں دہشت گردی میں ملوث ہیں۔