بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / گدھے کی کھالوں بارے مزید انکشافات

گدھے کی کھالوں بارے مزید انکشافات

کراچی/ اسلام آباد۔کراچی میں گدھوں کی کھالوں کا معاملے میں مزید انکشافات سامنے آئے ہیں جس میں اس کاروبار کے تانے بانے دبئی سے ملنے لگے۔نجی ٹی وی نے زرائع کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ علی بھیا نامی ڈیلر دبئی سے معاملات چلاتا ہے، کراچی میں ایک اور دس رکنی گروہ سرگرم ہے گروہ میں چینی، کورین اور پاکستانی شامل ہیں۔جبکہ گدھوں کا گوشت پنجاب کے ہوٹلوں میں پکتا ہے،چکن اور فش فیڈ میں بھی استعمال ہوتا ہے۔اقتصادی رابطہ کمیٹی کی جانب سے عائد کردہ پابندی کے باوجود ملک سے گدھوں کی کھالوں کی برآمدات جاری ہیں جس کا انکشاف پاکستان کسٹمزپریونٹیو کراچی اور پولیس مشترکہ کارروائی میں پکڑی گئی گدھے کی کھالوں کے ایک کھیپ سے ہوا ہے جو چین بھیجی جانے والی تھیں جبکہ ہزاروں کھالوں کی کھیپ پکڑے جانے سے یہ خدشہ پیدا ہوگیا ہے کہ منظم گروہ ملک میں گدھے کے گوشت کے فروخت میں ملوث ہیں۔

گزشتہ 2 دن میں مجموعی طور پر گدھے کی 5275کھالیں پکڑی گئی تھیں جن کی چین کی مارکیٹ میں 21 کروڑ روپے سے زائد کی قیمت ہے لیکن پاکستان میں ان گدھوں کے گوشت کاتاحال کوئی سراغ نہیں لگایا جا سکاتھا تاہم اب اطلاعات ہیں کہ گوشت پنجاب کے مختلف ہوٹلوں میں لے جایا جاتا ہے۔