بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / پولیس اور میڈیا تعلقات بہتر کیلئے رہنما اُصول متعارف

پولیس اور میڈیا تعلقات بہتر کیلئے رہنما اُصول متعارف


پشاور۔پولیس اور عوام کے درمیان روابط کو فروغ دینے اور میڈیا کے ساتھ تعلقات کی مزید بہتری کے لئے خیبر پختونخوا پولیس نے میڈیا مینجمنٹ کے راہنما اصول متعارت کرا ئے ہیں‘ پولیس گزشتہ ایک دہائی سے دہشت گردی کے خلاف برسرپیکار ہے اور دہشت گردی کے واقعات نے میڈیا اورپولیس کے کام کو بہت بڑھادیا ہے۔ ایک طرف پولیس جہاں شواہد اکھٹا کرنے اور کرائم سین کو محفوظ کرنے میں مصروف ہوتی ہے۔ تو دوسری طرف میڈیا کو واقعا ت کے متعلق زیادہ سے زیادہ معلومات درکار ہوتی ہیں۔اسی ضرورت کو مدنظر رکھتے ہوئے کے پی پویس نے عوام تک بہتررسائی کے لیے میڈیا مینجمنٹ کے رہنما اصول وضع کئے ہیں تاکہ ان کی روشنی میں پولیس اور میڈیا کے درمیان نہ صرف بہتر تعلقات قائم کئے جائیں بلکہ پبلک کو بروقت اور حقائق پر مبنی معلومات جلد سے جلد دی جاسکیں۔ ان ہی رہنما اصولوں کے متعلق خیبر پختونخوا پولیس کے بپلک انفارمیشن آفیسرز کی بیشہ وارانہ ٹریننگ کا بھی انعقاد کیا گیاجن میں صوبے کے تمام اضلاع میں کام کرنے والے چوالیس پی آر اُوز اور فیلڈ سٹاف کو تربیت دی گئی۔

تر بیت کا انعقاد آئی ٹی سکول پشاور ، پولیس سکول آف انٹیکیجنس ایبٹ آباد اور پولیس ٹریننگ سکول سوات میں کیا گیا۔اس موقع پر ڈی آئی جی ٹریننگ نے پولیس اور میڈیا کے تعلقات پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ’’ جرائم کے واقعات میں بھی میڈیا اور پبلک کو جلد سے جلد انفارمیشن کی ضرورت ہوتی ہے۔ وقوعہ ہونے سے لے کر تفتیش اور پھر عدالتی فیصلوں تک میڈیا پبلک کو خبریں فراہم کرتاہے ۔ میڈیا نے کسی بھی جرم، رفاع عامہ، ، مجرم کی شناخت یا حادثے کے بارے میں عوام تک معلومات پہنچانی ہوتی ہیں۔ ان ساری معلومات کا ذریعہ پولیس ہے ۔ کیونکہ پولیس کے پاس ہی حقائق پر مبنی معلومات ہوتی ہیں لہذا یہ ضروری ہے کہ پولیس اور میڈیا کے درمیان بہتر روابط ہوں تاکہ باہمی اعتماد کو برقرار رکھتے ہوئے میڈیا پبلک کو حقائق سے آگاہ رکھ سکے۔

میڈیا ٹرینر امجد قمر نے ٹریننگ کی اہمیت پر بات کی۔ پریس ریلیز بہتر بنانے ، فرد کے منصفانہ سماعت کے حق ، فرد کی رازداری اور سوشل میڈیا کے مثبت استعمال کے متعلق تربیت دی گئی۔ جس سے ان کی پیشہ ورانہ کام میں آسانی ہوگی۔ اس موقع پر مہمان خصوصی محمد کریم خان ڈی آئی جی ٹریننگ نے تربیت حاصل کرنے والوں میں سرٹیفکیٹس تقسیم کئے۔