بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / کوہاٹ، سکول سے اشتہاری ساتھیوں سمیت قابل اعتراض حالت میں گرفتار

کوہاٹ، سکول سے اشتہاری ساتھیوں سمیت قابل اعتراض حالت میں گرفتار


کوہاٹ۔کوہاٹ کیڑوسام میں سرکاری سکول سے مطلوب اشتہاری مجرم اور اسکے ساتھیوں کو خاتون کیساتھ رنگ رلیا مناتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار کرلیا گیا ہے۔کاروائی میں زیر حراست ملزمان کے قبضے سے خود کاراسلحہ بھی برآمد کرلیا گیا ہے ۔کاروائی کے دوران سکول کے باہر موجود چوکیدار کو بھی بھاری مقدار میں منشیات سمیت حراست میں لیا گیا ہے ۔

لاچی پولیس نے قابل اعتراض حالت میں گرفتار خاتون سمیت چھ افراداور سکول چوکیدار کے خلاف الگ الگ مقدمات درج کرلئے ہیں۔پولیس ذرائع کے مطابق خونی ڈکیتی کے مقدمہ میں مطلوب اشتہاری مجرم کی موجودگی کی اطلاع پر فوری اور کامیاب کاروائی کرتے ہوئے ایس ایچ او تھانہ لاچی سب انسپکٹر خان اللہ نے پولیس کی بھاری نفری کے ہمراہ نواحی علاقہ کیڑو سام کے گورنمنٹ ہائی سکول پر اچانک چھاپہ مار کر سکول کی عمارت کو گھیرے میں لے لیا۔کاروائی کے دوران پولیس نے سکول میں مسلح موجوداشتہاری مجرم اول زادین ولد انور دین سکنہ نادر بانڈہ اور اسکے ساتھیوں حفیظ الرحمان ولد عزیز الرحمان سکنہ شہزادی بانڈہ،ضیا ء اللہ ولد سعید گل سکنہ چوکارہ ضلع کرک،صابر گل ولد حکیم گل سکنہ تبلیغی مرکز کرک اور مصباح اللہ ولد وسیع اللہ سکنہ چارسدہ کو شکردرہ کی رہائشی خاتون شازیہ زوجہ اشرف خان کیساتھ قابل اعتراض حالت میں گرفتار کرلیا ۔

کاروائی میں پولیس کو زیر حراست افراد کے قبضے سے خود کار اسلحہ بھی ملا ہے جسمیں ایک کلاشنکوف،ایک رائفل ،ایک پستول اور سینکڑوں کارتوس شامل ہیں۔پولیس نے گرفتار تمام افراد کو تھانہ لاچی منتقل کردیا جہاں انکے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔پولیس کے مطابق گرفتار اشتہاری مجرم اول زادین تھانہ ملاکنڈ پولیس کو خونی ڈکیتی کے ایک مقدمہ میں عرصہ دراز سے مطلوب تھا۔پولیس کو دئیے گئے بیان میں خاتون نے بتایا ہے کہ ا نہیں پانچ ہزار روپے کے عوض عصمت فروشی کیلئے لایا گیا تھااور ملزمان باری باری انکے ساتھ حرام فعل کے مرتکب ہوئے ہیں۔ادھرچھاپہ مار کاروائی کے دوران پولیس نے سکول کے اندر موجود افراد کو پہرا دینے والے سرکاری سکول کے چوکیدار وزیرمحمد ولد زرملوک سکنہ کیڑو سام کو ڈیڑھ کلو گرام چرس سمیت گرفتار کرکے اسکے خلاف بھی بھاری مقدار میں منشیات رکھنے کے جرم میں مقدمہ درج کرلیا ہے۔پولیس نے اس حوالے سے تحریری مراسلہ کے ذریعے محکمہ تعلیم اور سکول کے اعلیٰ حکام کو بھی آگاہ کردیا ہے جبکہ کاروائی میں گرفتار تمام ملزمان کو جیل منتقل کرکے اس سلسلے میں مقدمات کی تفتیش شروع کردی گئی ہے۔