بریکنگ نیوز
Home / دلچسپ و عجیب / ہر شے کو ٹچ سکرین بنانے والاسپرے

ہر شے کو ٹچ سکرین بنانے والاسپرے


نیویارک۔انجینئروں نے ایک ایسا انقلابی سپرے پینٹ بنایا ہے جو کسی بھی سطح کو ٹچ پیڈ میں تبدیل کرکے اسے ٹچ سکرین میں تبدیل کردیتا ہے‘ اس پینٹ کو ’’الیکٹرک‘‘ کا نام دیا گیا ہے۔ اسے گاڑی کے سٹیئرنگ‘ گٹار کی سطح اور دیوار تک پر آزما کر اسے ٹچ سکرین میں تبدیل کیا جاسکتا ہے۔

کارنیگی میلون یونیورسٹی کے ماہرین نے اس کے ذریعے سمارٹ فون کیس کو انٹرایکٹو بنانے کا تجربہ بھی کیا ہے جبکہ اس کے ذریعے بٹن اور سلائیڈر بھی بنائے جاسکتے ہیں۔اسے کارنیگی میلون یونیورسٹی کے فیوچر انٹرفیس گروپ کے ماہرین نے بنایا ہے جس کے سربراہ کا کہنا ہے کہ پہلی مرتبہ سپرے پینٹ کے ایک ڈبے سے کسی بھی شے کو ٹچ سکرین میں بدلا جاسکتا ہے۔ فی الحال یہ چھوٹی ہموار سطحوں کو ٹچ سکرین میں تبدیل کردیتا ہے۔ اس سے قبل یہ ٹیکنالوجی بہت مہنگی تھی اور بڑی دیواروں اور فرنیچر کیلئے اس کی تیاری محال تھی لیکن اب کاربن اور موصل ( کنڈکٹو) پینٹ کے ذریعے اسے ممکن بنایا گیا ہے۔ اس کے بعد الیکٹروڈ کو سینسر کی جگہ استعمال کیا جاسکتا ہے۔ پینٹ سوکھ جانے کے بعد اس میں ہلکی بجلی دوڑائی جاتی ہے اور الیکٹروڈ کے ذریعے اس وولٹیج کو کنٹرول کیا جاتا ہے جودرحقیقت بٹن کی طرح کام کرتا ہے۔ جوں ہی کوئی پینٹ پر انگلی رکھے وولٹیج میں کمی واقع ہوتی ہے جو کسی سگنل کا کام کرتا ہے۔

اس عمل کو الیکٹرانک کی زبان میں ٹوموگرافک ریکنسٹرکشن بھی کہا جاتا ہے اور ٹو ڈی سینسنگ نظام انگلی کے محلِ وقوع کو نوٹ کرتا ہے۔ اس پر کام کرنے والے ایک طالب علم کا کہنا ہے کہ پینٹ سے سلائیڈر اور ٹچ بٹن بھی بنائے جاسکتے ہیں۔ اس کے ذریعے فی الحال شوقیہ کام کرنے والے ویکیوم بنانے اور تھری ڈی پرنٹنگ کا کام کرسکتے ہیں۔انجینئروں نے کہا ہے کہ اس طرح کی ایجادات مستقبل کیلئے بہت فائدہ مند ثابت ہونگی کیونکہ سائنس نے بہت زیادہ ترقی کر لی ہے‘ اور طرح طرح کی عوام کو آسان سہولیات سے آراستہ بھی کیا جا رہا ہے جس سے لوگ ان چیزوں سے بہت زیادہ آسانیاں پیدا کر سکے گے اور تھری ڈی پرنٹنگ سے بھی کام لے سکتے ہیں۔