بریکنگ نیوز
Home / سائنس و ٹیکنالوجی / 30 میٹر فاصلے تک مخصوص شخص کو آواز بھیجنے والا نظام

30 میٹر فاصلے تک مخصوص شخص کو آواز بھیجنے والا نظام


 لندن۔ برطانوی انجینیئر نے ایک دلچسپ نظام بنایا ہے جس کے ذریعے آپ کو بھری محفل میں سرگوشی کرنے کی ضرورت نہیں رہے گی بلکہ آپ کی صدا کو صرف ایک مخصوص شخص ہی سن سکے گا۔پہنے جانے والے اس آلے کو برسٹل یونیورسٹی کے انجینئر اور ان کے ساتھیوں نے تیار کیا ہے۔ لیکن اس کے لیے آپ کو اپنے ماتھے پر ایک لاؤڈ اسپیکر لگانا ہوگا اور منہ پر چند الیکٹروڈ لگانا ہوں گے تاکہ وہ آواز کو آگے پہنچاسکیں۔

اگرچہ اس کا ابتدائی نمونہ اتنا خوشنما اور استعمال میں آسان نہیں لیکن اسے بنانے والے انجینئر کا کہنا ہےکہ اسے مزید بہتر بناکر جنگوں میں سپاہیوں کے درمیان خفیہ گفتگو کے لیے استعمال کیا جاسکتا ہے۔ پھر الٹرا ساؤنڈ یا بالائے صوتی لہریں پانی کی گہرائی میں بھی اچھی طرح سفر کرتی ہیں اس لیے پانی کے اندر غوطہ خوروں تک بات اچھی طرح پہنچائی جاسکتی ہےانجینئر کے مطابق سننے والے کو یہ آواز کسی سرگوشی کی طرح سنائی دے گی لیکن کہنے والا دکھائی نہیں دے گا کیونکہ وہ 30 میٹر تک دور ہوسکتا ہے۔ اس کے لیے بولنے والے کے سینے یا سر پر ایک اسپیکر جب کہ ہونٹوں اور جبڑے پر چار برقیرے (الیکٹروڈ) لگائے جائیں گے جو بولنے والے کے منہ کی حرکات و سگنل کو نوٹ کریں گے۔

اس کے بعد ایک مشین لرننگ پروگرام کے ذریعے 10 الفاظ مثلاً ’ہاں‘ ، ’نہیں‘ یا ’رکو‘ اور ’چلو‘ کی شناخت کی گئی۔ ٹیسٹ کے دوران اس نظام نے 80 فیصد درستگی کے ساتھ الفاظ کی ادائیگی کی جب کہ یہ کام الیکٹروڈ سے انجام دیا گیا۔ اس کے بعد ایک لاؤڈ اسپیکر سے 6 درجے کے زاویے سے سننے والے کی جانب یہ آواز ڈالی گئی۔ بولنے والے کو ایک آئی ٹریکنگ کیمرہ بھی پہنایا گیا تھا تاکہ وہ مخصوص شخص کی جانب آواز بھیجے اور اسی شخص نےآواز سنی۔