بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / ہزارہ موٹر وے پرکام کے دوران حادثہ

ہزارہ موٹر وے پرکام کے دوران حادثہ

ہری پور۔ہزارہ موٹر وے پرکام کے دوران کرین کا زنجیر ٹوٹ گیا ،بھاری بیم مزدوروں پر گر گیا، دو جاں بحق، دو شدید زخمی ہو گئے ، لاشیں اور زخمی ہسپتال منتقل ،پوسٹ مارٹم کے بعد تدفین کے لیے ورثاء کے حوا لے کر دی گئیں، زخمیوں کو طبی امداد کے لیے ایبٹ آباد ریفر کر دیا گیا ، حادثہ کی ابتدائی رپورٹ پولیس ایمرجنسی سیل میں درج کرلی گئی ۔

تفصیلات کے مطابق ہزارہ ایکسپریس وے منصوبے پر کام کے دوران ہری پور میں ایک ہفتہ کے دوران دو بڑے حادثہ رونما ہوچکے ہیں گزشتہ روز ہری پور موہری کے مقام پر کام کے دوران ہیوی مشینری کے زریعے سیمنٹ سے بنے بھاری کم بیموں کو پل پر لے جایا رہا تھا کہ کرین کا لوہے کا زنجیر ٹوٹ گیا جس کے نتیجے میں بیم زمین پر کھڑے مزدروں پر آن گرا جس سے ایک مزدور کے جسم کے دو ٹکڑے ہوگئے۔

دوسرا مزدور ہسپتال کے جاتے ہوئے راستے میں دم توڑ گیا حادثہ کی اطلاع ملتے ہی قریبی علاقوں کے مکین بڑی تعداد میں جائے حادثہ پر جمع ہو گے اور امدادی کاروائیوں میں حصہ لے کر بھاری بیم کے نیچے سے مزدروں کو نکال کر ہری پور ویمن اینڈ چلڈرن ہسپتال منتقل کیا

اس ضمن میں زرائع نے بتایا ہے کہ حادثہ منگل کے روز دس بجے کے قریب موہری بیرج چار پر پیش آیا جس وقت سیفٹی آفسر ڈیوٹی پر موجود نہیں تھا کام کے دوران کرین کا لوہے کا زنجیر ٹوٹ گیا جس سے دومزدور لیاقت سکنہ لیہ بھکر اور عامر جاں بحق ہو گے ضروری قانونی کاروائی شناخت اور پوسٹ مارٹم کے بعد لاشیں تدفین کے لیے ورثاء کے حوالہ کر دی گئیں ہیں جوکہ لاشیں لے کر آبائی علاقوں کو روانہ ہوگئے ہیں۔

حادثہ میں دو شدید زخمیوں طاہر خان ایثال میں سے ایک مزدور ایک ٹانگ جسم سے علیحدہ ہو گی ہے جن کو ابتدائی طبی امدا دکے لیے ہری پور اور بعد ازاں ایبٹ آباد ریفر کر دیا گیا ہے چار دن قبل بھی ہزارہ موٹر وے شاہ مقصود کے مقام پر چار بھاری بیم گرنے سے زیر تعمیر پل گر گیا تھا جس کے نتیجے میں چار گاڑیاں تباہ تین ڈرائیور زشدید زخمی ہو گے تھے۔

زرائع کے مطابق ایکسپریس وے ہزارہ موٹر وے کے منصوبوں پر کام کرنے والی چینی کمپنی ZKBکے خلاف شہریوں نے بڑھتے ہوئے حادثات کے خلاف شدید احتجاج کیا مزدوروں کی سیفٹی سمیت حادثات میں جاں بحق اور زخمیوں کو مالی امداد دینے کا مطالبہ بھی کیا ہے حادثہ کی ابتدائی رپورٹ ہری پور ویمن اینڈچلڈرن ہسپتال کے ایمرجنسی رپوٹنگ سیل میں درج کرلی گئی ہے۔