بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / خیبر پختونخوا کی ٹرانسپورٹ برادری کی ہڑتال کی دھمکی

خیبر پختونخوا کی ٹرانسپورٹ برادری کی ہڑتال کی دھمکی

پشاور۔خیبر پختونخوا کی ٹرانسپورٹ برادری نے حکومت سے مذاکرات کی ناکامی اور مطالبات کی عدم منظوری کے پیش نظر 22 مئی کو پہیہ جام کا اعلان کرتے ہوئے تمام مسافر گاڑیوں کو محکمہ ٹرانسپورٹ کے دفتر کے سامنے کھڑی کرنے کا فیصلہ کر لیا ٗ ہڑتال کے معاملے پر پبلک ٹرانسپورٹ اونرز ایسوسی ایشن ٗ متحدہ ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن اور خیبر پختونخوا ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن سمیت دیگر تنظیموں نے ایکا کر لیا ایسوسی ایشنز کے عہدیداروں خان زمان آفریدی ٗ نور محمد ٗ سید شاہ ٗ محمد عالم ٗ افتخار اور مراد خان کے مطابق وزیراعلیٰ کے معاون خصوصی برائے ٹرانسپورٹ شاہ محمد ٹرانسپورٹروں کے مطالبات کی منظوری میں سنجیدہ نہیں ہیں جبکہ سیکرٹری ریجنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی سمیت دیگر حکام بے بس ہیں جن کے ساتھ مذاکرات کے مختلف دور ہوئے لیکن تمام ناکام رہے۔

ٹرانسپورٹروں کا کہنا تھا کہ ان کے مطالبات جائز ہیں جن میں جنرل بس سٹینڈ کے گرد و نواح میں بے قانونی اڈوں کی بھرمار ٗ حکومت کی جانب سے انہیں این او سی کی فراہمی اور پرمٹوں کی تجدید کے مطالبات شامل ہیں تاہم حکومت ان کے مسائل کا حل نہیں چاہتی جس پر ٹرانسپورٹ برادری نے 22 مئی کو پہیہ جام کا فیصلہ کیا ہے جس کے تحت پشاور بھر میں پبلک ٹرانسپورٹ بند رہے گی اورتمام مسافر گاڑیوں کو محکمہ ٹرانسپورٹ کے سامنے احتجاجاً کھڑی کرینگے۔