بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / مدارس رجسٹریشن کا ترمیمی ایکٹ مسترد

مدارس رجسٹریشن کا ترمیمی ایکٹ مسترد

پشاور۔وفاق المدارس نے صوبائی اسمبلی خیبر پختونخوا میں مدارس رجسٹریشن کے متعلق ترمیمی ایکٹ کو یکسر طور پر مسترد کردیا اس حوالہ سے وفاق المدارس کے صوبائی ناظم مولاناحسین احمد نے نئی ترمیم خلاف پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ کوئی دینی مدارس کولاوارث نہ سمجھے ۔وفاق المدارس مدارس کے خلاف ہر قسم سازشوں کو ناکام بنانے کی پوری صلاحیت رکھتے ہیں ۔دنیا کی کوئی بھی طاقت مدارس کی آزادی کو سلب نہیں کرسکتی ۔خیبر پختون خوا حکومت طے شدہ معاملات کو نہ چھیڑے مدارس تیس لاکھ طلبا وطالبات کو مفت تعلیم فراہم کررہے ہیں۔

رجسٹریشن کے نام پر مدارس کو تنگ کرنے کاسلسلہ اب بند ہوناچاہیے ،ہم حکومت کو واضح پیغام دینا چاہتے ہیں کہ مدارس فوبیاسے باہرنکلے ،وفاق المدارس ہر وقت رجسٹریشن کے لیے تیار ہے تاہم یک طرفہ طور پر مسلط شدہ قانون کو کسی بھی صورت میں قبول کرنے کے لیے تیار نہیں ۔ حکومت وفاق المدارس کے ساتھ مل کر رجسٹریشن کا معاملہ آسانی کے ساتھ حل کرسکتا ہے انہوں نے مزید کہاکہ مدارس چلانے والوں ،ملازمین طلبہ وطالبات اور مدارس سے تعلق رکھنے والے اور تعاون کرنے والے کے خلاف گھیرا تنگ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

خوف اور دہشت پھیلا کر عوام الناس کو مدارس کی کمیٹی کا ممبر بننے سے روکا جارہا ہے ۔ جبکہ مدارس آئین پاکستان کے رو سے اس ملک میں دینی تعلیم دینے کا حق رکھتے ہیں ۔ ملکی قوانین کا احترام کرتے ہوئے اس کے مطابق کام کرتے ہیں اس لیے مدارس ہر ایسے قانون کو مسترد کرنے کا حق رکھتے ہیں جوان کے بنیادی حقوق اور آزادی کے خلاف ہوانہوں نے کہاکہ مذکورہ ایکٹ کے خلاف آئندہ ہفتے اتحادتنظیمات مدارس کا اجلاس بلایا گیا ہے جس میں آئندہ کا لائحہ کا عمل طے کیا جائے گا ۔