بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / وزیراعظم کے احتساب سے کرپشن کا خاتمہ ہوگا ٗعمران خان

وزیراعظم کے احتساب سے کرپشن کا خاتمہ ہوگا ٗعمران خان

کوئٹہ۔پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ پہلے ایسٹ انڈیا کمپنی نے برصغیر کو لوٹا ،اب شریف لمیٹڈ کمپنیاں ملک کو لوٹ رہی ہیں ‘ جندال نے پاکستان کا دورہ کر کے کلبھوشن کو بچا لیا ‘ عالمی عدالت انصاف نے کلبھوشن کی پھانسی روک دی‘ کلبھوشن نے پاکستان میں دہشتگردی کرانے کا خود اعتراف کیا، نواز شریف اقتدار میں آتا ہے تو سارا معاشرہ تباہ کر دیتا ہے ‘ اس کے احتساب سے کرپشن ختم ہو گی‘ نواز شریف کے ڈان لیکس کے معاملے کے بعد سے جس طرح کے کام ہیں قوم کو اس پر بالکل کوئی اعتماد نہیں ہے، وہ اپنے ذاتی مفادات کے پیچھے لگا ہوا ہے، نواز شریف نے ڈان لیکس کے ذریعے اپنی فوج کو پوری دنیا کے سامنے ذلیل کروایا،تحریک انصاف کے سوشل میڈیا کے نوجوانوں کو حراست میں لیا تو سڑکوں پر نکلیں گے،خیبر پختونخوا میں 30 فیصد بجٹ بلدیاتی نمائندوں کو ملتا ہے ‘ بلوچستان کی پولیس بھی کے پی کے جیسا پولیس ایکٹ ڈیمانڈ کر رہی ہے۔ وہ جمعہ کو کوئٹہ کے ایوب سٹیڈیم میں عوامی جلسے سے خطاب کررہے تھے ۔ عمران خان نے کہا کہ جلسے میں شاندار استقبال پر شکریہ ادا کرتا ہوں خدا نے یہ خطہ بہت خوبصورت بنایا ہے اور یہاں کے لوگ بہت باشعور ہیں آپکے پاس خاص طور پر آیا ہوں آپ لوگ یہ سمجھیں کہ ہم نے کس طرف جانا تھا اور کس طرف جارہے ہیں ۔

عمران خان نے کہا کہ نوجوانوں آپکو یہ بات سمجھنی ہے خدا نے پاکستان کو ہر قسم کی نعمت سے نوازا ہے ‘اسکے باوجود پاکستانی لوگ اور خاص طور پر بلوچستان کے لوگ کیوں اتنے غریب ہیں ‘نائجیریاایک ایسا ملک ہے جو تیل کے ذخیرے پر بیٹھا ہوا ہے وہاں بھی لوگ غربت اور بے روز گار ہیں ۔انہوں نے کہا کہ آج سے اڑھائی سوسال پہلے دنیا کا امیرترین خطہ برصغیر تھا۔دنیا کی 23فیصد دولت برصغیر میں تھی ۔برطانیہ نے ایسٹ انڈیا کمپنی بنائی اور فوجوں کے ذریعے ہندوستان پر قبضہ کرلیا ۔سب سے پہلے انہوں نے بنگال پرقبضہ کیا جو ہندوستان کا سب سے امیر علاقہ تھا ایسٹ انڈیا کمپنی کے سربراہ رابرٹ کلائیو نے کہا کہ بنگال کا ایک ضلع نشہ پور سارے برطانیہ سے زیادہ امیر تھا۔ برطانیہ 200 سال برصغیر پر حکومت کر کے واپس گیا تو برطانیہ دنیا کا امیر ترین خطہ بن چکا تھا اور برصغیر غریب ترین خطہ بن گیا۔ عمران خان نے کہا کہ ایسٹ انڈیا کمپنی نے جتنا پیسہ برصغیر سے بنایا سب برطانیہ منتقل کر دیا۔ جس وجہ سے ہندوستان غریب ہو گیا اور ابھی بھی پاکستان میں کمپنیوں کی حکومت ہے اب یہاں شریف لمیٹڈ کمپنی کا قبضہ ہے۔ سندھ میں زرداری کمپنی قابض ہے اور ادھر مولانا فضل الرحمن اینڈ کمپنی اپنے بھائیوں سمیت قابض ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ اچکزئی اور اسفند یار کی کمپنیا ں بھی قابض ہیں۔ یہ سب لوگ امیر سے امیر تر ہوتے جا رہے ہیں اور دوسری طرف غریب لوگ اور زیادہ غریب ہو رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ آپ کے ٹیکس کا پیسہ حکومت کے پاس جاتا ہے اور اقتدار میں بیٹھے لوگ اسے چوری کر کے منی لانڈرنگ کے ذریعے باہر کے میں منتقل کر تے ہیں۔ 800 ارب روپے پچھلے چار سال میں یہاں سے دوبئی منتقل کئے گئے ہیں۔ چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ نواز شریف نے ملک سے پیسہ چوری کر کے منی لانڈرنگ کے ذریعے باہر بھیجا اور اسے پانامہ کیس کمپنیا ں بنا کر چھپا دیا ان پیسوں سے مہنگے ترین مے فیئر کے فلیٹس خریدے گئے۔ ایک سال میں پاکستان سے ایک ہزار ارب روپیہ چوری کر کے سے باہر جاتا ہے یہی پیسہ پاکستان میں خرچ ہوتو خوشحالی آئے۔ یہی پیسہ ہم اپنے نوجوانوں پر خرچ کریں انہیں تعلیم دیں تو وہ خود ہی سڑکیں اور پل تعمیر کر سکتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں تعلیمی سہولیات کی انتہائی کمی ہے یہاں سہولیات دی جانی چاہئیں۔ جرمنی اور جاپان میں دوسری جنگ عظیم کے بعد ایک بلڈنگ بھی نہیں بچی تھی وہاں سب کچھ تباہ ہو گیا تھا مگر اگلے 10 سال وہ پھر سے دنیا کی سپر پاور بن گئے تھے۔ انہوں نے سرمایہ کاری اپنے لوگوں پر کی تھی۔ عمران خان نے کہا کہ آپ کا پیسہ آپ کے اوپر خرچ ہونا چاہیے اگرایسا ہوتا تو یہاں کے لوگوں کو اتنی مشکلات درپیش نہ ہوتیں ۔ کے پی کے کا سالانہ بجٹ 110 ارب روپے ہے جبکہ جو پیسہ چوری ہو رہا ہیہ وہ ایک ہزار ارب روپے ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں اپنا پیسہ بچانے کیلئے خود باہر نکلنا ہو گا۔ آئس لینڈ اور ساؤتھ کوریا کی عوام اپنے حقوق کیلئے باہر نکلیں آپ لوگوں کو بھی اپنے حقوق کیلئے خود باہر نکلنا ہو گا۔ مشتاق رئیسانی اڑھائی ارب روپے کی کرپشن کرتے ہوئے پکڑا گیا جب ایک قوم خوف کا بت توڑنے کا فیصلہ کر لے اسے کوئی ڈرا نہیں سکتا۔ عمران خان نے کہاکہ کلبھوشن یادیو نے خود تسلیم کیا کہ میں پاکستان میں دہشت گردی پھیلانے آیا ہوں۔ اگر اس طرح کوئی آئی ایس آئی کا ایجنٹ بھارت میں گرفتار ہوتا تو بھارت کبھی اس کا کیس عدالت میں جانے نہ دیتا اور اس کو پھانسی دیتا۔ نواز شریف کے ڈان لیکس کے معاملے کے بعد سے جس طرح کے کام ہیں قوم کو اس پر بالکل کوئی اعتماد نہیں ہے۔

نواز شریف پاکستان کے نہیں اپنے ذاتی مفادات کے پیچھے لگا ہوا ہے۔ نواز شریف نے ڈان لیکس کے ذریعے اپنی فوج کو پوری دنیا کے سامنے ذلیل کروایا۔ عمران خان نے کہاکہ جندال نے نواز شریف سے ملاقات کی اور اس کے بعد عالمی عدالت انصاف نے کلبھوشن کی پھانسی رکوا دی۔ ہم جے آئی ٹی سے کہتے ہیں کہ وہ نواز شریف کے ملک سے باہر کاروبار پارٹنرز کا پتہ لگائے۔ میں اعلان کرتا ہوں کہ اگر نوجوانوں کو سوشل میڈیا استعمال کرنے پر گرفتار کیا گیا یا سوشل میڈیا کو پابندی کرنے کی کوشش کی تو ہم سڑکوں پر نکلیں گے۔ تحریک انصاف کے نوجوانوں کو تنگ مت کرو ورنہ ہم سڑکوں پر نکلنے پر مجبور ہو جائیں گے۔ انہوں نے کہاکہ بلوچستان پولیس بھی مجھ سے خیبر پختونخوا جیسے پولیس ایکٹ کی ڈیمانڈ کر رہی ہے۔ 4 سال پہلے خیبر پختونخوا پولیس برے حالات میں تھی اور آج پاکستان کی نمبر ون پولیس بن چکی ہے۔ ہم بلوچستان میں بھی ایسا ہی پولیس ایکٹ لائیں گے۔ موقع ملا تو بلوچستان کے لوگوں کی قسمت تبدیل کر دیں گے۔ عمران خان نے کہا کہ وزیراعظم یوتھ لون سکیم کے تحت بھی 75 فیصد قرضے پنجاب کے نوجوانوں کو ملتے ہیں خیبر پختونخوا میں بلدیاتی نمائندوں کو ترقیاتی فنڈز ملتے ہیں۔ اس طرح ملک میں ترقی آتی ہے۔ لوگوں کے بے پناہ پیار دینے پر شکر گزار ہوں۔