بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / خیبر پختونخوا حکومت سے سوتیلی ماں کا سلوک برقرار

خیبر پختونخوا حکومت سے سوتیلی ماں کا سلوک برقرار


پشاور۔پراونشل سیکٹر ڈویلپمنٹ پروگرام (پی ایس ڈی پی ) میں خیبر پختونخوا کیلئے مختص شدہ رقم 190 بلین میں صرف57 بلین (30فیصد) جاری کرنے اور صوبے کیلئے صرف 2سکیموں کی منظوری کا انکشاف ہوا ہے مرکزی حکومت نے 30فیصد رقم بھی مالی سال کے آخر میں جاری کئے تاکہ صوبے میں ترقیاتی سکیمیں بروقت مکمل نہ ہوسکیں جبکہ خیبر پختونخواحکومت کی جانب سے پیش کردہ 22 ترقیاتی منصوبوں میں صرف2سکیمیں منظور کی گئی ہیں ۔

اس حوالے سے صوبائی وزیر خزانہ مظفر سید ایڈوکیٹ کا کہنا ہے کہ وفاقی حکومت پی ایس ڈی پی کی مد میں رواں مالی سال میں 133بلین روپے کی بقایا رقم سمیت آئندہ مالی سال کے لئے بھی فنڈ کا اجراء بروقت ممکن بنائے تاکہ صوبے میں جاری ترقیاتی منصوبوں کو پایہ تکمیل تک پہنچایا جاسکے انہوں نے مرکزی حکومت کے رویے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے امید ظاہر کی کہ وفاقی حکومت خیبر پختونخوا کے رواں مالی سال کے پی ایس ڈی پی میں بقایا جات سمیت آئندہ مالی سال کے لئے مختص شدہ حصہ کا اجراء جلد ممکن بنائے گی ۔

تاکہ آئندہ مالی سال کے لئے پیش کردہ ترقیاتی منصوبوں کی منظوری سمیت پی ایس ڈی پی میں مختص شدہ جائز حق بمعہ واجبات ادا ہوں اور صوبے کے وسائل کو عوام پر خرچ کرنے میں دشواری نہ ہوان کا کہنا تھا کہ مرکزی حکومت صوبہ خیبر پختونخواکو جان بوجھ کر نظر انداز نہ کرے کیونکہ ہمارا صوبہ دہشت گردی،انتہا پسندی ،زلزلوں اور سیلاب سے متاثرہ ہونے کے ساتھ اسے بہت سے چیلنجز کا سامنا ہے۔