بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / عمران خان پینل کی بلامقابلہ کامیابی کے امکانات

عمران خان پینل کی بلامقابلہ کامیابی کے امکانات

پشاور۔پی ٹی آئی کے انٹرا پارٹی الیکشن میں پینل سسٹم اور ہر پینل کے لیے پارٹی کے پندرہ فیصد اراکین اسمبلی کی حمایت کی شرط کے بعد عمران خان کے پینل کی بلامقابلہ کامیابی کے امکانات روشن ہوگئے ہیں پارٹی کے نئے الیکشن قواعدکے مطابق صرف وہ ممبران الیکشن میں حصہ لے سکتے ہیں جو کسی ایسے پینل کاحصہ ہوں جسے مقرر کردہ تعداد میں پی ٹی آئی ممبران اسمبلی کی حمایت حاصل ہوعمران خان سمیت کوئی بھی ممبر صرف ایک پینل کی طرف سے آسکتاہے۔

اگر کوئی اور پینل مقابلہ پر آتا ہے تو اسے چیئر مین کیلئے عمران خان کے مقابلے پر اپنا امیدوارلازمی لانا ہوگا۔دوسرا کوئی بھی پینل چیئرمین کیلئے سیٹ خالی نہیں چھوڑ سکتا۔الیکشن میں حصہ لینے کیلئے صرف وہی پینل کوالیفائی کر سکتا ہے جسے پی ٹی آئی کے کم ازکم20 فیصد اراکینِ سینٹ، قومی و صوبائی اسمبلی کی سپورٹ حاصل ہو۔ اس شرط کو پورا نہ کرنے والا پینل کسی صورت الیکشن میں حصہ لینے کا اہل نہیں ہو گا۔پی ٹی آئی کے سینٹ و اسمبلی ممبران ایک سے زائد پینل کو سپورٹ نہیں کر سکتے۔

الیکشن صرف درج زیل عہدوں کیلئے ہوں گے جو پینل میں شامل ہوں گے چیئرمین، وائس چیئرمین، جنرل سیکرٹری، صوبائی صدر سندھ، صوبائی صدر بلوچستان، ریجنل صدور پنجاب اور خیبر پختونخواہ ، یہ تمام عہدے ایک ہی پینل کی طرف سے ہوں گے۔سندھ اور بلوچستان میں صوبائی صدورجبکہ پنجاب اور خیبرپختونخواہ میں ریجنل صدور یونین کونسل، تحصیل، ضلع اور ریجن سطح تک کی تنظیموں میں تمام عہدوں پر نامزدگیاں خود کریں گے۔