بریکنگ نیوز
Home / صحت / تمباکونوشی سے سالانہ لاکھوں افراد متاثر

تمباکونوشی سے سالانہ لاکھوں افراد متاثر


پشاور۔غیر سرکاری تنظیم اتحاد برائے انسداد تمباکو نوشی اور سول سوسائٹی کے عہدیداروں نے صوبائی ووفاقی حکومتوں سے مطالبہ کیا ہے کہ سگریٹ کی ڈبوں کے 85 فیصد حصے پر صحت سے متعلق تصویری انتباہ فوری نفاذ کیا جائے تاکہ تمباکو نوشی پر کچھ حد تک قابو پایاجا سکے،اس وقت ملک میں خواتین اور بچوں سمیت5لاکھ 55ہزار افراد سالانہ تمباکو نوشی سے متاثرہوتے ہیں تمباکونوشی سے انکار کے علمی دن کے موقع پر تنظیم کے سربراہ ڈاکٹر ریاض یوسفزئی ، تیمور کمال ،قمرنسیم، زارعلی خان، ثناء گلزار اور رادیش ٹونی نے پشاور پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ملک میں سگریٹ کی تشہیر پر کے پابندی عائد کردی جائے اور گھٹکے اور نسوار پھر بھی پابندی عائد کی جائے تاکہ ملک میں منہ کی بڑھتی کینسر پر قابوپایا جائے اور عوامی مقامات پر پابندی کو بھی یقینی بنایاجائے۔

انہوں نے کہا کہ عالمی ادارہ صحت کے رپورٹ کے مطابق دنیامیں ہر سال تقریبا 108000سگریٹ نوشی کی وجہ سے جان سے ہاتھ دو بیٹھتے ہیں جبکہ اس طرح ہر روز 1200 نوجوان اور بچے تمباکو نوشی کی وجہ سے مختلف بیماریوں کے شکار ہوتے ہیں انہوں نے مطالبہ کیا کہ ملک میں تمباکو نوشی کی روک تھام کیلئے بنائے گئے قوانین پر فوری طور پر عمل درآمد کیا جائے تاکہ آنے والے نسل تمباکو نوشی سے لگنے والے بیماریوں سے بچ سکے۔