بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / لوڈشیڈنگ سے شہری ذہنی اور جسمانی صحت کھورہے ہیں، ماہرین

لوڈشیڈنگ سے شہری ذہنی اور جسمانی صحت کھورہے ہیں، ماہرین

کراچی: پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن نے ملک میں بجلی کے بڑھتے ہوئے شارٹ فال پرگہری تشویش کا اظہارکیا ہے جو عوام کیلیے شدید مشکلات کا سبب ہے تاہم لوڈشیڈنگ کی وجہ سے سرکاری اسپتالوں میں زیرعلاج مریضوں کو شدید تشویشناک صورتحال کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔

ملک میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ بڑھنے سے عوام کیلیے صحت کے سنگین مسائل پیدا ہورہے ہیں،اس بحران کی وجہ سے لوگ اپنی ذہنی اورجسمانی صحت کھورہے ہیں ، دل کی بیماریاں، بلڈ پریشر ، شوگر اور جسم میں پانی کی کمی کے کیسسزبڑھ رہے ہیں ،لوگوں میں چڑچڑا پن بھی بڑھ رہا ہے، لوگ شور والے جنریٹراستعمال کررہے ہیں جو ماحولیاتی آلودگی کا سبب بن رہے ہیں،اس صورت حال میں لوگوں کی نیند پوری نہیں ہوتی جس کی وجہ سے وہ اپنے کام پر بھرپور توجہ نہیں دے پاتے۔

اعلامیے کے مطابق گزشتہ4سال سے مرکز میں پاکستان مسلم لیگ(ن)کی حکومت کے دعوؤں کے باوجود ملک میں بجلی کا شارٹ فال جوں کا توں موجود ہے۔ وفاقی وزیر بجلی وپانی خواجہ آصف اپنی تمام تر توجہ وزارت دفاع پر دیتے ہیں، بجلی کے مسائل کی ذمے داری وزیر مملکت عابد شیرعلی صاحب کے سپرد کررکھی ہے جو دعوے اور بیانات دینے کی حد تک بہت سرگرم رہتے ہیں، اس سلسلے میں نیپرا بھی بجلی کی عدم دستیابی کے باوجود بلوں میں مسلسل اضافہ کررہا ہے جو عوام کی تکلیف میں اضافے کا باعث ہے۔

پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن وفاقی حکومت سے مطالبہ کرتی ہے وہ ایسے اقدامات کیے جس سے گنجائش کے مطابق بھرپور بجلی پیدا کی جا سکے،بجلی کے اس بحران کو حل کرنے کے لیے اولین ترجیح دے،رمضان کے مقدس مہینے میں لوگوں کی مشکلات کو کم کیا جا سکے۔