بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / علاقائی مسائل ٗجرگہ سسٹم کو مزید فعال بنانے کا فیصلہ

علاقائی مسائل ٗجرگہ سسٹم کو مزید فعال بنانے کا فیصلہ


پشاور ۔ صو بائی دارالحکومت پشاور میں امن وامان کی صورتحال برقراررکھنے اور جرائم پر قابو پانے کیلئے اغواء کاروں ،بھتہ خوروں ،منشیات فروشوں ٗ جرائم پیشہ اور سودخوروں کیخلاف نئی حکمت عملی کے تحت بھر پور کریک ڈاؤن کیلئے لائحہ عمل طے کرلیاگیا ہے علاقائی مسائل کے حل کیلئے جرگہ سسٹم کو مزید فعال بنانے کا فیصلہ کیاگیا ہے جبکہ کرپشن ٗ سمگلنگ کی روک تھام کیلئے تما م ایس ایچ اوز کو آخری وارننگ دی گئی ہے پیٹرولنگ سسٹم کے معیار کو بہتر اور ہوائی فائرنگ تدارک کیلئے خصوصی مہم شروع کی جائیگی ۔

اس ضمن میں گزشتہ روز ایس ایس پی آپریشنز سجاد خان کی زیرصدارت ملک سعد شہید پولیس لائن میں اجلاس منعقد ہوا جس میں تمام ایس ایچ اوز نے شرکت کی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ایس ایس پی آپریشنز کا کہناتھاکہ آئی جی پی اور سی سی پی او کی ہدایات کے مطابق عوام ،صحافی برادری اور شہداء کے لواحقین سے شائستہ زبان سے پیش آیا جائے کرپشن اور سمگلنگ کسی صورت برداشت نہیں کرینگے شکایت کی صورت میں سخت سے سخت تادیبی کاروائی عمل میں لائی جائیگی کار خاص سسٹم کو ختم کریں علاقے کی سطح پر جرگہ سسٹم کو فعال بنا ئیں پبلک میٹنگ کا انعقاد کرکے عوام سے رابطے میں رہے اور جرگہ سسٹم کے ذریعے رنجشیں ختم کرنے کی کوشش کریں۔

جرائم پیشہ افراد پر کھڑی نظر رکھیں تفتیش کامعیار بہتر بنائیں تاکہ ملزمان سزاء سے نہ بچ سکیں زیر تفتیش مقدمات میں تفتیش کرکے جلد از جلد نمٹائیں اپنے ماتحت ملازمین کو ہدایت کریں کہ جرائم پیشہ افراد پر کھڑی نظر رکھیں تما م ایس ایچ او ز کی ذمہ داری ہے کہ تھانوں ،چوکیوں اور پیٹرولنگ سسٹم پر نظر رکھ کر اپنی سکیورٹی کو برقرار رکھیں موبائل گاڑیوں میں روشنی پستول ،ٹارچ ،جیکٹ ہیلمٹ ،ایمونیشن کا خاص خیال رکھیں تاکہ کسی ناخوشگوار واقع کی صورت میں کمی نہ ہو ں ۔

سکیورٹی حدشات کے پیش نظر جیکٹ ہیلمٹ کا استعمال دوران پیٹرولنگ موبائل آٖفیسر ز ڈرائیور اور جوانوں پر لازمی ہیں کوتاہی کی صورت میں محکمانہ کاروائی کی جائیگی بھتہ خوروں کے خلاف سخت کاروائی کرکے متاثرہ افراد کا ہرممکن داد رسی کی جائے علاقے کی سطح پر شہداء کے بچوں سے ملاقات کرکے ان کے مسائل میں خصو صی دلچسپی لیں ہوائی فائرنگ کی تدارک کیلئے لائحہ عمل تیار کرکے ان کے خلاف سخت کاروائی عمل میں لائی جائے ۔