بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / حسین نواز کی جے آئی ٹی میں چوتھی پیشی

حسین نواز کی جے آئی ٹی میں چوتھی پیشی


اسلام آباد۔وزیراعظم کے صاحبزادے حسین نواز نے کہا ہے کہ ہم پر بے جا الزامات تو لگائے گئے لیکن ثبوت کوئی نہیں آیا،اثاثے آج بھی وہی ہیں جو مشرف دور میں تھے،جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم کے سارے سوالوں کے جوابات دئیے،پھر بلائیں گے تو پیش ہوں گے تاکہ عوام کے سامنے سچ آجائے۔انہوں نے ان خیالات کا اظہار ہفتے کو جوڈیشل اکیڈمی کے باہر جے آئی ٹی میں پیشی کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو میں کیا۔وزیراعظم کے صاحبزادے نے کہا کہ چوتھی بار جے آئی ٹی میں پیش ہوا اور ان کے سارے سوالوں کے جوابات دئیے اور اگر مزید تفتیش کیلئے پھر بلائیں گے تو بھی حاضر ہوں گے کیوں کہ ہم اس معاملے کو خوش اسلوبی کے ساتھ حل کرنا چاہتے ہیں۔

حسین نواز نے کہا کہ عدالتی احتساب سے بہت پہلے مشرف دور کے انتظامی احتساب کا سامنا کر چکے ہیں،14ماہ تک گواہوں سمیت جیلوں میں رہے لیکن کرپشن ثابت نہ ہوسکی اور اس کی وجہ یہ ہے کہ ہم پر الزامات تو لگائے گئے لیکن کوئی اس کا ثبوت نہ دے سکا اوراب بھی الزام پر الزام لگائے گئے لیکن ہمارے خلاف کسی کے پاس کوئی ٹھوس ثبوت نہیں جو ہمیں کرپٹ ثابت کرسکے۔انہوں نے کہا کہ ہمارے اثاثے آج بھی وہی ہیں جو مشرف دور میں تھے اور خود کو سچا ثابت کرنے کیلئے احتساب کا سامنا کر رہے ہیں۔

جے آئی ٹی کے سامنے چوتھی بار پیش ہوا اور اگر مزید تفتیش کیلئے بلائیں گے تو بھی پیش ہوں گے تاکہ سچ عوام کے سامنے آجائے۔حسین نواز نے صحافی کے ایک سوال پر کہا کہ وزیراعظم کو ابھی جے آئی ٹی کی جانب سے نہیں بلایا گیا اور اگر بلایا گیا تو وہ ضرور پیش ہوں گے کیونکہ انہوں نے ہمیشہ آئین وقانون کی بالادستی کو مقدم رکھا ہے۔