بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / خیبر پختونخوا کے آخری بجٹ کا تخمینہ 600ارب

خیبر پختونخوا کے آخری بجٹ کا تخمینہ 600ارب


پشاور۔خیبر پختونخوا حکومت کاپانچواں اورآخری بجٹ کل پیش کیاجارہاہے نئے مالی سال کے بجٹ کاتخمینہ چھ سو ارب روپے سے زائد کالگایا گیاہے ذرائع کے مطابق سالانہ ترقیاتی پروگرام کیلئے208ارب روپے مختص کئے جانے کا امکان ہے سالانہ ترقیاتی پروگرام مجموعی طور پر 1631منصوبوں پر مشتمل ہوگا جن میں1182جاری اور449نئے منصوبے شامل ہوں گے، سالانہ ترقیاتی پروگرام میں ابتدائی و اعلیٰ تعلیم کے141منصوبوں کیلئے20ارب32کروڑ روپے، صحت کے101منصوبوں کیلئے12ارب روپے، آبنوشی کے84منصوبوں کیلئے5ارب 16کروڑ روپے، آبپاشی کے209منصوبوں کیلئے7ارب5کروڑ روپے، بلدیات کے38منصوبوں کیلئے4ارب50کروڑ روپے اور زراعت کے38منصوبوں کیلئے3ارب99کروڑ روپیرکھے گئے ہیں۔

بجٹ میں پشاور میٹرو بس منصوبہ اور سوات ایکسپریس وے کیلئے بھی خطیر رقم مختص ہوگی، صحت انصاف کارڈ سکیم بدستور جاری رہے گی ،چار ہزار مساجد کی سولرائزیشن کیساتھ سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن میں 10سے15فیصد تک اضافہ کا امکان ظاہر کیا جارہا ہے، بجٹ میں صوبہ کے شاعروں، ادیبوں اور فنکاروں کو ماہانہ 30ہزار روپے کی ادائیگی کا عمل دوبارہ شروع کرنے کے علاوہ سرکاری ملازمین کی ہیلتھ انشورنس سکیم کا بھی اعلان کیا جائیگا ،صوبائی وزیر خزانہ مظفر سید پاکستان تحریک انصاف کی اتحادی حکومت کا پانچواں بجٹ پیش کریں گے جس کیلئے تمام تیاریوں کو حتمی شکل دے دی گئی ہے اور صوبائی اسمبلی کا اجلاس دوپہردو بجے طلب کیا گیا ہے