بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / ملک کی بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں کو ادائیگیوں کا حجم537ارب روپے

ملک کی بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں کو ادائیگیوں کا حجم537ارب روپے


اسلام آباد ۔ ملک کی بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں کو ادائیگیوں کا حجم537ارب روپے تک پہنچنے کے باوجود کمپنیوں کی جانب سے بڑے ڈیفالٹرز کو بجلی کی فراہمی جاری رکھی جائے گی۔میڈیا رپورٹس کے مطابق صارفین کی جانب سے نہ کی جانے والی ادائیگیوں کی بلوچستان میں انتہائی خراب صورتحال ہے جہاں پر ڈیفالٹرز نے کمپنیوں کے 181ارب روپے کی ادائیگی کرنی ہے جبکہ کمپنیوں کی جانب سے بڑے بڑے ڈیفالٹرز کو بجلی مسلسل فراہم کی جارہی ہے جس سے گردشی قرضہ میں مسلسل اضافہ ہوتا چلا جارہا ہے۔

رپورٹس کے مطابق ملک کا گردشی قرضہ پھیل کر400 ارب روپے تک پہنچ چکا ہے،جس میں سے123 ارب روپے آئی پی پیز،150 ارب روپے پاکستان اسٹیٹ آئل،30ارب روپے واپڈا اور گیس کے پلانٹس اور نیوکلےئر پاور پلانٹس کو حکومت کی جانب سے واجب الادا ہیں۔واضح رہے 2013ء میں اقتدار میں آکر پاکستان مسلم لیگ(ن) نے480 ارب روپے کا گردشی قرضہ ادا کرکے دعویٰ کیا تھا کہ انہوں نے توانائی کے شعبہ کو پھر سے پاؤں پر کھڑا کردیا ہے تاہم حکومت کے چار سال گزرنے کے بعد گردشی قرضے ایک بار پھر400ارب روپے تک جا پہنچے ہیں۔