بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / شفاف عدالتی نظام کے تحت انصاف کی فوری فراہمی اولین ترجیح ہے۔چیف جسٹس

شفاف عدالتی نظام کے تحت انصاف کی فوری فراہمی اولین ترجیح ہے۔چیف جسٹس


ہنگو۔چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ مظہر عالم میاں خیل نے کہا ہے کہ شفاف عدالتی نظام کے تحت انصاف کی فوری فراہمی اولین ترجیح ہے۔عدالتی نظام کو مذید موئثر بنانے کیلئے اقدامات اٹھارہے ہیں۔خیبر پختونخواہ میں مزید 103 سول ججز کی تعیناتی کے احکامات جاری کئے جائیں گے۔جس سے عدالتی نظام میں بہتری آ ئے گی۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے دورہ ہنگو کے موقع پر جوڈیشل کمپلیکس کے افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر ضلع ہنگو کے ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج سمیت تمام ججز صاحبان،ضلعی اور پو لیٹکل انتظامیہ کے افسران،وکلاء برادری اور علاقہ معزیزین بھی موجود تھے۔جوڈیشل کمپلیکس کے باقاعدہ افتتاح کرتے ہوئے ۔

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ مظہرعالم میاں خیل نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ فنڈز کی کمی کے باعث بعض اضلاع میں عدالتی امور چلانے میں مسائل کا سامنا رہا۔مگر اب پشاور ہائیکورٹ کو مالی خود مختاری ملنے سے عدالتی نظام میں بہتری لانے کیلئے تمام اضلاع میں جوڈیشل کمپلکس تعمیر کرائیں جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ ہنگو میں فیملی کورٹ کے قیام کے تحت فی میل جج کی تعیناتی سمیت انسداد دہشت گردی کورٹ کے قیام کیلئے بھی اقدامات کئے جائیں گے۔جو کہ وقت کی اہم ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ ظلم اور ناانصافی کا راستہ روکنے کیلئے عدالتوں کا قیام عمل میں لایا گیا۔اور عدلیہ انصاف فراہمی کو ہر صورت یقینی بنانے کو ترجیح سمجھتی ہے۔

چیف جسٹس نے کہا کہ لائبریری کتب اور ڈیجٹیل لا ئبریری سیٹ اپ مکمل ہو نے پر صوبے کے تمام اضلاع کو جدید ڈیجیٹیل لائبریری نظام کے تحت آپسمیں جوڑ ا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ پبلک سروس کمیشن کے تحت کا میاب 103 ججز کے صوبے کے مختلف اضلاع میں تعیناتی جلد عمل میں لائی جائے گی۔جس سے عدالتی نظام میں مزید بہتری آئے گی۔

اس موقع پر ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج ہنگونے چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ مظہر عالم میاں خیل کی عدلیہ کیلئے مثالی خدمات کو سراہتے ہوئے کیا کہ ان کی کوششوں سے ہنگو میں 13 سال سے التوء کا شکار جوڈیشل کمپلیکس کے آغاز کے ساتھ ہنگو دیگر اضلاع میں ججز کی کمی کا مسلہ حل ہو نے سمیت صوبے بھر میں کر پشن کا خاتمہ ممکن ہو ا۔اور کے پی کے میں عدالتی نظام میں نماں بہتری آئی دریں اثناء ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن ہنگو کے صدر حسن خان ایڈوکیٹ نے سپا نامہ پیش کر تے ہو ئے چیف جسٹس کو مسائل سے آگاہ کیا۔