بریکنگ نیوز
Home / انٹرنیشنل / سعودی عرب میں سگریٹس کی قیمتوں میں دوگنا اضافہ

سعودی عرب میں سگریٹس کی قیمتوں میں دوگنا اضافہ

ریاض: سعودی عرب نے عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی کم ہوتی قیمتوں کی وجہ سے آمدنی میں آنے والی کمی سے نمٹنے کے لیے پہلی مرتبہ مخصوص اشیاء پر ٹیکس عائد کردیا۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کی رپورٹ کے مطابق سعودی عرب کی حکومت نے سگریٹس، انرجی ڈرنکس اور سافٹ ڈرنکس پر مخصوص ٹیکس عائد کیا گیا ہے جس کے بعد ان کی قیمتیں تقریباً دگنی ہوگئی ہیں۔ تیل برآمد کرنے والے دنیا کے سب سے بڑے ملک سعودی عرب کے شہری اب تک ہر قسم کے ٹیکس سے مستثنیٰ تھے جبکہ مختلف اشیاء پر انہیں بھاری سبسڈیز بھی فراہم کی جاتی ہیں۔ حکومت کی جانب سے عائد کردہ نئے ٹیکس کا نفاذ اتوار 11 جون سے ہوگیا جس کے بعد تمباکو کی قیمت میں 100 فیصد تک اضافہ ہوگیا۔ ٹیکس لگنے کے بعد سعودی عرب میں سگریٹ کے ایک ڈبے کی قیمت میں 18 سے 24 ریال کا اضافہ ہوگیا ہے۔

سعودی عرب کی جنرل اتھارٹی برائے زکوٰۃ و انکم ٹیکس کے مطابق انرجی ڈرنکس کی قیمتوں میں بھی 100 فیصد اضافہ کردیا گیا ہے جبکہ سافٹ ڈرنکس کی قیمتیں 50 فیصد تک بڑھادی گئی ہیں۔ خیال رہے کہ سعودی عرب میں شراب پر مکمل پابندی عائد ہے جس کی وجہ سے سگریٹس اور سافٹ ڈرنکس عوام میں خاصی مقبول ہیں۔ سعودی عرب میں ٹیکس کا نفاذ اس معاہدے کے سلسلے کی کڑی ہے جو خلیج تعاون کونسل کے چھ رکن ممالک کے درمیان طے پایا ہے اور یہ عالمی مالیاتی فنڈ کی سفارشات سے بھی مطابقت رکھتا ہے۔ خلیج تعاون کونسل کے رکن ممالک نے اس بات پر بھی اتفاق کیا ہے کہ وہ 2018 سے مخصوص اشیاء پر 5 فیصد ویلیو ایڈڈ ٹیکس عائد کریں گے۔

یاد رہے کہ تیل کی قیمتوں میں کمی کی وجہ سے 2015 میں سعودی عرب کی آمدنی میں ریکارڈ 98 ارب ڈالر کی کمی واقع ہوئی تھی جس کے بعد سے اس نے تیل پر انحصار کم کرنے کے لیے معاشی پالیسیاں وضع کرنا شروع کردی تھیں۔