بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / حکومت ہڑتالی ڈاکٹروں کے سامنے ڈٹ گئی

حکومت ہڑتالی ڈاکٹروں کے سامنے ڈٹ گئی

پشاور۔خیبرپختونخواحکومت نے ہڑتالی ڈاکٹروں کے سامنے جھکنے سے انکار کرتے ہوئے ڈاکٹروں کی ہڑتال کو صوبہ کے خلاف مسلم لیگ ن کے رہنماؤں کی سازش قراردیتے ہوئے کہاہے کہ ڈاکٹروں کی ہڑتال کے پیچھے امیر مقام کا ہاتھ ہے جو عوام دشمنی کررہے ہیں تاہم ہم کسی بھی ہڑتالی ڈاکٹرسے نرمی نہیں برتیں گے اور تمام ہڑتالی ڈاکٹروں کے خلاف قانون کے مطابق کاروائی کی جائے گی ،ان خیالات کا اظہار صوبائی وزراء شاہ فرمان اور شہرام ترکئی نے صوبائی اسمبلی میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ ڈاکٹروں نے ہڑتال کرتے ہوئے ہسپتال بند کرنے کا پروگرام بنایا ہوا تھااوراس میں دیگر ہسپتالون سے تعلق رکھنے والے ڈاکٹر شامل تھے ۔انہوں نے کہا کہ ڈٓکٹر سب سے زیادہ تنخواہ لینے والے سرکاری ملازمین ہیں ،ہماری حکومت نے 3200 ڈاکٹروں کو سروس سٹرکچر دیا لیکن اس کے باوجود یہ مریضوں کا خیال نہیں رکھتے اور آئے روز ہڑتالیں کررہے ہوتے ہیں جو کسی بھی طور قابل برداشت نہیں ۔انہوں نے کہا کہ حکومت ڈاکٹروں کے یہ طور طریقے کسی بھی طور نہیں مانے گی کیونکہ چند لوگ ذاتی مفادات کی خاطر ڈاکٹرز کمیونٹی کو استعمال کررہے ہیں لیکن نہ تو قانون ہستالوں کو بند کرنے کی اجازت دیتاہے اور نہ ہی حکومت یہ برداشت کرے گی ۔

انہوں نے کہا کہ کچھ لوگ تحریک انصاف حکومت کی جانب سے ہسپتالوں میں کی گئی اصلاحات کے مخالف ہیں اور رکاوٹیں ڈالنا چاہتے ہیں لیکن عوام ہڑتالوں سے تنگ آچکے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ینگ ڈاکٹروں کو نوکریاں دی گئیں ان کے تمام مطالبات کو تسلیم کیاگیا لیکن غیرحاضری کسی بھی طور نہیں مانیں گے ،ان ڈاکٹروں کو ڈیوٹی دینے کی عادت نہیں تھی ہم نے انھیں اس کا عادی بنایاتو اب پھر ان کی عادتیں خراب نہیں ہونے دیں گے ۔انہوں نے کہا کہ جو سیاسی شخصیات ڈاکٹروں کی ہڑتال میں ساتھ دے رہی ہیں وہ عوام کی دشمن ہیں اور عوام کو ان کی حقیقت مان لینی چاہیے ۔