بریکنگ نیوز
Home / کالم / بادشاہت اور بدلتی اقدار

بادشاہت اور بدلتی اقدار


تمام بادشاہوں اور بادشاہتوں نے ایک دن فنا ہونا ہے‘ رہے گا نام اللہ کا۔ ہمارے بزرگوں نے زار روس کا تختہ الٹتے دیکھاہمارے وقتوں میں افغانستان کے بادشاہ ظاہر شاہ کا بادشاہی نظام اپنی موت مرا ۔ شہنشاہ ایران کو ایران سے بھاگنا پڑا اور دفن ہونے کیلئے بھی اپنے ملک کی مٹی میں دوگز زمین نہ ملی کتنے بدقسمت تھے یہ بادشاہ؟ بزرگ کہتے ہیں کہ دنیا میں بس فرنگیوں کی بادشاہت کا نظام شاید رہ جائے اور وہ بھی اسلئے کہ وہاں ملکہ ہو یا بادشاہ وہ ہاؤس آف کامنز کی اجازت کے بغیر پر بھی نہیں مار سکتا ملکہ یا بادشاہ کا سالانہ بجٹ وہاں کی پارلیمنٹ منظور کرتی ہے‘ تھائی لینڈ کے بادشاہ بھومی بول اول یدیج پچھلے دنوں 88 برس کی عمر میں وفات پا گئے یہ عجیب بات ہے کہ تھائی لینڈ میں درجنوں بغاوتیں ہوئیں اور یہ ملک سیاسی طور پر از حد انتشار کا شکار رہا پر تھائی لینڈ کے عوام نے اپنے بادشاہ کو ہمیشہ عزت اور توقیر کی نظر سے دیکھا تھائی لینڈ کے بادشاہ نے اپنے ملک پر 70 برس حکومت کی وہ تھائی لینڈ کے عوام کے اتحاد اور یکجہتی کی نشانی تھے سیاسی مبصرین کاخیال ہے کہ تھائی لینڈ کا ولی عہد کراؤن پرنس ماہا وجیرہ لونگون اپنے باپ کی طرح بالکل بھی نہیں ۔تھائی لینڈ میں 1932ء سے آئینی جمہوریت ہے وزیر اعظم اور پارلیمنٹ کے ہاتھوں میں سیاسی قوت ہے اور بادشاہ ملک کاسربراہ ہے بادشاہ نے اپنے دور حکومت میں زیادہ وقت دیہی آبادی کے منصوبوں کو دیا۔

فوج ہو یا سیاست دان سب ان کی باتوں اور نصیحتوں پر کان دھرتے تھے ان کے جانشین کو البتہ وہ سیاسی اور فوجی اور عوامی پذیرائی حاصل نہیں‘ جہاں تک سعودی عرب کے شاہی خاندان کا تعلق ہے اب تک وہاں جتنے بھی بادشاہ گزرے وہ کافی عمر رسیدہ تھے ان میں اکثر مرکھپ چکے ہیں موجودہ بادشاہ بھی کافی ضعیف ہیں اور کئی جسمانی اور ذہنی بیماریوں کا شکار سعودی شاہی خاندان میں کئی جواں سال شہزادوں کی نظر اب بادشاہت پر ہے اس میں کوئی شک نہیں کہ موجودہ سعودی بادشاہ سلمان کا فرزند پرنس محمد بن سلمان جو کہ سعودی حکومت کا وزیر دفاع بھی ہے اور ڈپٹی کراؤن پرنس بھی ۔ اس وقت سعودی عرب میں طاقتور ترین شخص ہے پر وہ قانونی ولی عہد نہیں 2015ء میں سعودی روایات کے مطابق مقرم بن عبدالعزیز بادشاہت کے بانی عبدالعزیز بن عبدالرحمان ابن سعود کا سب سے چھوٹا بیٹا ولی عہد کے منصب پر فائز ہوگیا تھا ۔

29 اپریل 2015ء کو البتہ بادشاہ سلمان نے قوانین میں ردوبدل کر کے اپنے بھتیجے محمد بن نائف السعود کو ولی عہد بنا دیا محمد بن نائف کی کوئی اولاد نہیں اگر بادشاہ سلمان پرنس بن سلمان کوڈپٹی کراؤن پرنس نہ بناتے تو شاید ان کے اور کراؤن پرنس کے درمیان چپقلش کبھی بھی پیدا نہ ہوتی سعودی عرب کا آئندہ بادشاہ کون ہوگا؟ قوانین و شواہد بتاتے ہیں کہ قرعہ اسی کے نام نکلے گا جوقدرت کو منظور ہوگا مصر کے شاہ فاروق نے اپنی بادشاہت کے دوران جو گل کھلائے اس پر کئی کتابیں لکھی گئیں اس جیسا بادشاہ ماضی بعید میں مشرق وسطیٰ نے نہیں دیکھا اللوں تللوں کی زندگی نے شاہ فاروق کی لٹیا ڈبودی شہنشاہ ایران کی فرعونیت اور ظلم کے چرچوں پر کئی کتابیں لکھی گئیں اس کا جو انجام ہوا وہ بھی دنیا نے دیکھا اب خدا سعودی عرب کے بادشاہوں اور شہزادوں کی خیر کرے۔