بریکنگ نیوز
Home / انٹرنیشنل / مصرکے 2 جزائر کے متعلق اہم فیصلہ

مصرکے 2 جزائر کے متعلق اہم فیصلہ

قاہرہ۔مصر کی پارلیمان نے طویل بحث و مباحثے کے بعد بحر احمر میں خلیج عقبہ کے داخلی سمندری راستے میں آنے والے دو جزیرے صنافیر اور تیران سعودی عرب کو دینے کی باضابطہ طور پر منظوری دیدی۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق مصری پارلیمنٹ نے مصر اور سعودی عرب کے درمیان سرحدوں کے تعین اور جزائر کی سعودی عرب کو منتقلی کے بارے میں پیش کردہ بل کی منظوری دیتے ہوئے اس تنازع کو حتمی طور پر حل کردیا ہے۔

مصری پارلیمنٹ کے اسپیکر علی عبدالعال نے گذشتہ روز ایک بیان میں بتایا کہ پارلیمنٹ میں صنافیر اور تیران جزیروں کی سعودی عرب حوالگی کے معاملے پر رائے شماری کی گئی۔ اس موقع پر کثرت رائے سے ان دونوں جزیروں کو سعودی عرب کو منتقل کرنے کا بل منظور کیا گیا۔پارلیمان کی جانب سے منظوری کے بعد حتمی منظوری کے لیے بل صدر مملکت کے پاس جائے گا جس کے بعد فیصلے کو نافذ العمل کردیا جائے گا۔قبل ازیں مصری پارلیمنٹ میں قومی سلامتی کمیٹی کے چیئرمین کمال عامر نے ایک بیان میں کہا تھا کہ پارلیمنٹ مصر اور سعودی عرب کے درمیان سرحدوں کے تنازع کے حل اور صنافیر اور تیران جزیرے سعودی عرب کو منتقل کرنے سے اتفاق کیا ہے تاہم اس معاملے پر پارلیمنٹ میں رائے شماری کی جائے گی۔

مصر کی قانون ساز کونسل نے منگل کے روز تیران اور صنافیر جزائر کو سعودی عرب کومنتقل کرنے کے معاہدے کو آگے بڑھانے کا اعلان کیا تھا۔ مصری پارلیمنٹ نے رائے شماری کے ذریعے ان دونوں جزائر پر سعودی عرب کی بالادستی تسلیم کرلی ہے۔خیال رہے کہ مصر اور سعودی عرب نے اپریل 2016 کو سمندری حدود کے تعین کا ایک معاہدہ کیا تھا۔ اس معاہدے کے تحت مصری حکومت نے بحر احمر میں واقع دو جزیرے تیران اور صنافیر سعودی عرب کو دینے کا اعلان کیا تھا۔