بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / پاکستان دہشتگردی کے خطرے سے بلا امتیازلڑا ‘آرمی چیف

پاکستان دہشتگردی کے خطرے سے بلا امتیازلڑا ‘آرمی چیف

راولپنڈی ۔ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہاہے کہ بھر پور خطرے کو مربوط قومی جواب کی ضرورت ہوتی ہے ، پاک فوج اس قسم کے جواب کیلئے ریاست کے تمام اداروں کے ساتھ مل کر کام کر رہی ہے، اپنی ذمہ داریوں سے آنکھیں بند کر کے دہشت گردی کو شکست نہیں دی جا سکتی‘ دہشت گردی کا کوئی مذہب فرقہ یا نسل نہیں ہوتی‘ پاکستان دہشتگردی کے خطرے سے بلا امتیازلڑا ‘ پاکستان آپریشن ردالفساد کے ذریعے دہشتگردی کو جڑ سے اکھاڑ پھینکے گا ۔ وہ جمعہ کو اسلام آباد میں نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی میں نیشنل سیکیورٹی اینڈ وار کورس کے شرکاء سے خطاب کر رہے تھے۔ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر)کے مطابق اپنے خطاب میں قومی سلامتی کو درپیش خطرات کو اجاگر کرتے ہوئے آرمی چیف نے کہا کہ بھرپور خطرے کو مربوط قومی جواب کی ضرورت ہوتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاک فوج اس قسم کے جواب کیلئے ریاست کے دیگر تمام اداروں کے ساتھ مل کر کام کر رہی ہے۔

آرمی چیف نے کہا کہ دہشت گردی کا کوئی مذہب ‘ فرقہ یا نسل نہیں ہوتی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان دہشت گردی کی اس لعنت سے بلا امتیاز لڑا اور جاری آپریشن ردالفساد کے ذریعے اسے جڑ سے اکھاڑ پھینکا جائیگا۔ جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ اپنی ذمہ داریوں سے آنکھیں بند کر کے ہرگز دہشت گردی کو شکست نہیں دی جا سکتی۔ خطے کے چند کھلاڑی الزام تراشیوں کا سہارا لے رہے ہیں۔ آرمی چیف نے کہا کہ پاک فوج ملک کی سلامتی اور دفاع کیلئے پر عزم ہے اور قوم کی حمایت سے اپنی فرائض کی ادائیگیاں اس طریقے سے جاری رکھے گی۔ آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف نے کہاکہ پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بے شمار قربانیاں دی ہیں۔

آرمی چیف نے کورس کے شرکاء کو قومی سلامتی کو درپیش داخلی و بیرونی چیلنجز سے آگاہ کیا۔ قبل ازیں این ڈی یو آمد پر نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی کے صدر لیفٹیننٹ جنرل رضوان اختر نے آرمی چیف کا استقبال کیا۔