بریکنگ نیوز
Home / انٹرنیشنل / معاشی پابندیوں پر قطر کا سخت ردعمل

معاشی پابندیوں پر قطر کا سخت ردعمل

دوحہ۔ قطری وزیر خارجہ شیخ محمد بن عبدالرحمن الثانی نے کہا ہے کہ معاشی ناکہ بندی ختم ہونے تک عرب ممالک سے مذاکرات نہیں کریں گے ‘بات چیت کے لئے پابندیاں ہٹاناہوں گی۔ قطر کے وزیر خارجہ نے سرکاری ٹی وی کو انٹرویو میں کہاکہ سعودی عرب سمیت عرب ریاستوں سے رابطہ کیا گیا اور انہیں معاملہ ختم کرنے کی درخواست کی گئی لیکن انہوں نے مثبت جواب نہیں دیا۔ انہوں نے دوحہ میں قائم الجزیرہ نیٹ ورک کے مستقبل سمیت قطر کے داخلی امور کے متعلق کسی بات چیت کو مسترد کر دیا۔

قطری وزیر خارجہ نے کہا کہ وہ اگلے ہفتے امریکہ کا دورہ کریں گے جس میں امریکی حکام کے ساتھ عرب ممالک کے ساتھ تنازعے کے باعث قطر کی معیشت اور دہشت گردی کے خلاف جنگ پر اثرات پر بات چیت کریں گے۔انھوں نے کہا کہ ابھی تک پابندیوں کے اٹھائے جانے کی جانب کوئی پیش رفت نہیں دیکھی جا رہی اور یہ کسی قسم کے پیش رفت کی شرط اولین ہے۔ انھوں نے کہا کہ ابھی تک قطر کو سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اور بحرین کی جانب سے کوئی مطالبہ نہیں ملا ہے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ چھ ملکی خلیجی تعاون کونسل کے متعلق امور پر ان سے بات چیت ہو سکتی ہے۔ اس کونسل میں قطر، سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، بحرین، کویت اور عمان شامل ہیں۔قطری وزیر خارجہ نے کہا کہ اگر ان کے ملک کا بائیکاٹ جاری رہا تو وہ علاقے کے دوسرے ممالک پر بھروسہ کریں گے جن میں سعودی عرب کا حریف ایران بھی شامل ہے۔انھوں نے کہا کہ ہمارے پاس متبادل منصوبہ ہے جو ترکی، کویت اور عمان پر مبنی ہے۔