بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / برطرف ان ٹرینڈاساتذہ ملازمت پر بحال

برطرف ان ٹرینڈاساتذہ ملازمت پر بحال


پشاور۔پشاورہائی کورٹ نے قرار دیا ہے کہ 1997ء میں ملازمت سے برطرف ہونے والے ان ٹرینڈاساتذہ بھی اس وقت کی پالیسی کے تحت ملازمت پر بحالی کے حقدارہیں لہذااس وقت کے برطرف ان ٹرینڈاساتذہ کو برطرف ملازمین کے قانون2012ء کی روشنی میں ملازمت پربحال کیاجائے عدالت عالیہ کے جسٹس روح الامین ٗ جسٹس قلندرعلی خان اورجسٹس سیدعتیق شاہ پرمشتمل لارجربنچ نے یہ احکامات گذشتہ روز انتظارعلی وغیرہ سمیت اساتذہ کے مختلف کیڈرز سے تعلق رکھنے والے60برطرف اساتذہ کی رٹ درخواستوں پرجاری کئے

اس موقع پران کے وکیل خالدرحمان نے عدالت کو بتایا کہ درخواست گذارمحکمہ تعلیم میں اساتذہ کے مختلف کیڈرزپرتعینات تھے جو1995-96میں بھرتی ہوئے تاہم انہیں1997ء میں سیاسی بنیادوں پربھرتی ہونے کی بناء ملازمت سے برطرف کر دیا گیا تھا اور2012ء میں برطرف ملازمین کی بحالی کے قانون کی روشنی میں بیشتربرطرف ملازمین کو بحال کردیاگیاتھا تاہم درخواست گذاروں کو اس بناء بحال نہیں کیاگیاکہ وہ بھرتی کے وقت ان ٹرینڈتھے

انہوں نے عدالت کو بتایا کہ جس وقت بھرتی کااشتہارجاری ہواتھا اس میں ٹرینڈاوران ٹرینڈدونوں کوبھرتی کی پیشکش کی گئی تھی جبکہ سٹیبلشمنٹ ڈیپارٹمنٹ نے بھی اس بھرتی کودرست قرار دیاتھا جبکہ حال ہی میں سپریم کورٹ نے بھی اس حوالے سے اس وقت کی پالیسی کے مطابق بھرتی کودرست قرار دیاتھاتاہم بعدازاں پشاورہائی کورٹ کے دو مختلف بنچوں نے اس حوالے سے متضاد فیصلے دئیے تھے جس کی بناء پرپشاورہائی کورٹ کالارجربنچ تشکیل دیاگیااورفاضل لارجربنچ نے دونوں جانب سے دلائل مکمل ہونے پررٹ پٹیشن منظورکرتے ہوئے قرار دیا ہے کہ 1997ء میں ملازمت سے برطرف ہونے والے ان ٹرینڈاساتذہ بھی اس وقت کی پالیسی کے تحت ملازمت پر بحالی کے حقدارہیں

لہذااس وقت کے برطرف ان ٹرینڈاساتذہ کو برطرف ملازمین کے قانون2012ء کی روشنی میں ملازمت پربحال کیاجائے۔