بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / غیر ملکیوں کیلئے اوریجن کارڈز متعارف کرانیکا فیصلہ

غیر ملکیوں کیلئے اوریجن کارڈز متعارف کرانیکا فیصلہ

اسلام آباد۔ وزارت داخلہ نے ایسے غیر ملکیوں کے لیے پاکستانی اوریجن کارڈز دوبارہ متعارف کرانے کا فیصلہ کیا ہے اوریجن کارڈز سے متعلقہ امور کو حل کرنے کے بعد انہیں دوبارہ جاری کیا جائے گا جبکہ چینی شہریوں کو ویزا جاری کرنے کی پالیسی کا ازسر نو جائزہ لیا گیا چینی شہریوں کو ویزا کی مصدقہ دستاویزات اور چھان بین کے بعدجاری کرنے کی ہدایت کی گئی ہے چینی شہریوں کو متعلقہ ادارے کے دعوت نامے کی فراہمی پر ویزا جاری کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے نادرا چمبر آف کامرس اور امیگریشن اتھارٹی کو الیکٹرانک سسٹم کے تحت معلومات فراہم کرے گا۔تفصیلات کے مطابق وزارت داخلہ چوہدری نثار کی زیر صدارت اعلیٰ سطحی اجلاس منعقد ہوا ۔

جس میں سیکریٹری داخلہ ایڈووکیٹ جنرل چیئرمین نادرا ڈائریکٹر جنرل وزارت خارجہ اور ایف آئی اے کے سینئر حکام نے شرکت کی اجلاس میں جعلی کمپنیوں کی طرف سے جعلی ویزوں کے حالیہ اجراء کا نوٹس لیتے ہوئے یہ فیصلہ کیا گیا کہ چینی باشندوں کو صرف اسی صورت میں ویزا دیا جائے گا کہ ان کے پاس متعلقہ ملک کی چمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کا لیٹر موجود ہو اور اس پر پاکستان میں موجود چینی سفارتخانے کی کمرشل اتاشی کے دستخط موجود ہوں اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ اس ضمن میں نادرا اور ایف آئی اے چمبرز اور امیگریشن حکام کی معاونت بھی کریں گے اجلاس میں بزنس ویزا کے اجراء کے عمل کو ریگولیٹ کیا جائے گا اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ ریجنل پاسپورٹ آفس کو اس قسم کے ویزا دینے کے اختیار کو واپس لے لیا جائے گا۔

جبکہ مستقبل میں ان ویزوں کا اجراء صرف IMPASSسے پاس ہو گا اور اس ادارے کے ڈائریکٹر جنرل کو ویزوں کی توسیع میں تین ماہ کا اختیار ہو گا اگر کوئی ویزے میں مذید توسیع کا خواہشمند ہوا تو اسکی درخواست وزارت داخلہ کو بھجوائی جائے گی اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ ویزے میں زیادہ توسیع کی حوصلہ شکنی کی جائے گی اجلاس میں یہ فیصلہ کیا گیا کہ چینی باشندے جو پاکستان میں جاری پراجیکٹس کے حوالے سے دورہ پاکستان کا ارادہ رکھتے ہیں ان کے لیے پاکستانی ایمبیسی اور مشنز چائینیز اتھارٹیز کی طرف سے کلیئرنس کے بعد انہیں ایک سال کا ویزا دیا جائے گا جبکہ ان کے ویزے کی مدت میں توسیع کا فیصلہ وزارت داخلہ صرف اس صورت میں کرے گی کہ ان کے پاس متعلقہ ملازمت کے کاغذات موجود ہوں اس موقع پر وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان نے ہدایت کی کہ چینی باشندوں کو ویزوں کے اجراء کا معاملہ شفاف بنایا جائے اور اس میں جو بھی مسائل درپیش ہیں ان کا حل نکالا جائے اس موقع پر انہوں نے نادرا کو ہدایت کی کہ وہ پاکستان میں کام کرنے والے تمام چینی باشندوں کا ڈیٹا اکٹھا کریں تا کہ یہ ڈیٹا سیکورٹی ایجنسیز کو چینی باشندے بھی سیکورٹی کو یقینی بنانے کے لیے سیکورٹی اداروں کو دیے جا سکیں انہوں نے کہا کہ چینی باشندے جو پاک چائنہ اقتصادی راہداری کے حوالے سے پاکستان میں کام کر رہے ہیں یا دوسرے چینی باشندے جو کسی دوسرے سلسلے میں پاکستان کے دورے کرتے رہتے ہیں انکے حوالے سے بھی ایک مکمل میکنزم تیار کیا جائے ۔