بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / پی ٹی آئی انٹرا انتخابات الیکشن کمیشن میں چیلنج

پی ٹی آئی انٹرا انتخابات الیکشن کمیشن میں چیلنج

اسلام آباد۔پی ٹی آئی ضلع صوابی کے صدر شاہ ملک یوسفزئی نے انٹر پارٹی انتخابات کو الیکشن کمیشن میں چیلنج،پی ٹی آئی نے پارٹی کے اصل آئین کو معطل کرکے الیکشن کرائے، یہ غیر قانونی غیر آئینی ہیں تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی ضلع صوابی کے صدرشاہ ملک یوسفزئی نے 13 جون کو ہونے والے انٹراپارٹی انتخابات کو الیکشن کمیشن میں چیلنج کرتے ہوئے درخواست دائر کردی ہے۔ جس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ پی ٹی آئی نے پارٹی کے اصل آئین کو معطل کرکے الیکشن کرائے۔

یہ انٹرا پارٹی الیکشن غیر قانونی غیر آئینی ہیں۔ لہذا الیکشن کمیشن انہیں کالعدم قرار دے اور الیکشن کمیشن تحریک انصاف ا نٹرا پارٹی الیکشن کو معطل کرتے ہوئے دوبارہ اپنی نگرانی میں کرانے کا حکم دیں۔اس سے قبل تیرہ جون کو پی ٹی آئی کی جانب سے انٹرا پارٹی انتخابات کی تفصیلات الیکشن کمیشن میں جمع کرائی گئی۔ الیکشن کمیشن میں جمع کرائی گئی دستاویزات کے مطابق عمران خان چیئرمین جبکہ شاہ محمود قریشی وائس چیئرمین کے عہدوں پر منتخب ہوئے۔

اس کے علاوہ جہانگیر ترین پارٹی کے سیکرٹری جنرل، عارف علوی پی ٹی آئی سندھ کے صدر، یار محمد رند بلوچستان ، علیم خان وسطی پنجاب اور علی امین گنڈا پور صدر خیبرپختونخوا ساتھ منتخب ہوئے ہیں۔الیکشن کمیشن میں جمع کرائی گئی پی ٹی آئی دستاویزات کے مطابق پی ٹی آئی کے انٹرا پارٹی انتخابات میں انصاف پینل نے 1 لاکھ 89 ہزار 55 ووٹ حاصل کیے جبکہ احتساب پینل نے 41 ہزار 647 ووٹ حاصل کیے۔ تحریک انصاف انٹرا پارٹی انتخابات میں دونوں پینلز کو کل 2 لاکھ 56 ہزار 957 ووٹ پڑے جبکہ انٹرا پارٹی الیکشن میں مسترد شدہ ووٹوں کی تعداد 26 ہزار 255 رہی۔