بریکنگ نیوز
Home / انٹرنیشنل / قطر بحران‘ چار عرب ممالک کے 13 مطالبات

قطر بحران‘ چار عرب ممالک کے 13 مطالبات

دوحہ۔ قطر کا بائیکاٹ کرنے والے چار عرب ممالک نے بحران کو ختم کرنے کے لئے اپنے 13 مطالبات پیش کئے ہیں جس میں ٹی وی چینل الجزیرہ کو بند کرنے کا مطالبہ بھی شامل ہے۔سعودی عرب سمیت جن چار ممالک نے قطر سے تعلقات توڑے ہیں ان کا الزام ہے کہ قطر دہشت گرد گروپوں کی مدد کرتا ہے۔نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر متعلقہ حکام نے بتایا کہ مطالبات کی اس فہرست کو کویت نے قطر کے حوالے کیا ہے جو اس بحران کو حل کرنے میں ثالثی کا کردار ادا کر رہا ہے۔

انھیں میں سے ایک رہنما نے غیر ملکی خبر رساں ادارے کو بتایاکہ مطالبات میں الجزیرہ ٹی وی کو بند کرنے سمیت ایران سے تعلقات کم کرنے کی بھی بات کہی گئی ہے۔قطر اور دیگر خلیجی ممالک کے درمیان تنازعات کو ختم کرنے کی غرض سے مطالبات کی لسٹ سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، مصر اور بحرین نے تیار کی ہے۔ اس میں دوحہ سے قطر میں ترکی کے فوجی اڈے کو بھی بند کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

اس کے مطابق قطر کو اخوان المسلمین، داعش، القاعدہ، حزب اللہ اور جبہ فتح الشام جیسی تمام شدت پسند تنظیموں سے اپنے روابط منقطع کرنے ہوں گے اور قطر میں موجود ان تمام افراد کو حوالے کرنا ہوگا جنھیں دہشت گرد قرار دیا گیا ہے۔ان ممالک نے قطر کو اس پر عمل کرنے کے لیے دس دن کا وقت دیا گیا ہے۔یہ مطالبات اس وقت قطر کو دئیے گئے ہیں جب حال ہی میں امریکی وزیر خارجہ ریکس ٹلرسن نے قطر کا بائیکاٹ کرنے والے چار عرب ممالک سے کہا کہ وہ اپنے مطالبات قابل عمل اور مناسب رکھیں۔