بریکنگ نیوز
Home / انٹرنیشنل / ایک ملک دو نظام چین کی عظیم پالیسی ہے ٗ شی جن پنگ

ایک ملک دو نظام چین کی عظیم پالیسی ہے ٗ شی جن پنگ

ہانگ کانگ ۔چینی صدر شی جن پنگ نے کہا ہے کہ ہانگ کانگ میں ایک ملک دو نظام چین کی عظیم پالیسی ہے،ہانگ کانگ عالمی مالیاتی،شپنگ اور تجارتی مرکز کے طور پر چین اور بین الاقوامی مارکیٹ کے درمیان اہم رابطہ پل ہے۔چائنہ ریڈیو انٹرنیشنل کے مطابق چینی صدر شی جن پنگ نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے زور دیا کہ گزشتہ بیس برسوں میں ایک ملک دو نظام کی پالیسی سے ہانگ کانگ میں نمایاں کامیابیاں حاصل ہوئی ہیں۔

ہمیں ایک ملک دو نظام کے ہانگ کانگ میں مزید عمل درآمد کی امید ہے۔ شی نے کہا کہ ایک ملک دو نظام چین کی ایک عظیم پالیسی ہے۔ ہانگ کانگ ایک عالمی مالیاتی،شپنگ اور تجارتی مرکز کے طور پر چین کے اندرونی علاقوں اور بین الاقوامی مارکیٹ کے درمیان ایک اہم رابطہ پل ہے۔علاوہ ازیں ایک ملک دو نظام کی پالیسی سے ہانگ کانگ نہ صرف اندرونی علاقوں کے ترقیاتی مواقع اور وسیع مارکیٹ شئیر کرتا ہے، بلکہ ہانگ کانگ چین کے کھلے پن منصوبے کے ایک اہم حصے کے طور پر زیادہ ترقیاتی مواقع حاصل کرتا ہے۔

ہانگ کانگ کو ان فائدوں کو مضبوط بنانا چاہیے، تاکہ ہانگ کانگ اقتصادی عالمگیریت اور علاقائی تعاون میں کامیابیاں حاصل کر سکے اور عوام کو زیادہ روزگار کے مواقع فراہم ہو سکیں ۔ شی نے نشاندہی کی کہ ماضی، حال یا مستقبل میں مرکزی حکومت ہمیشہ ہانگ کانگ کی حمایت ومدد کرتی رہی ہے اور کرتی رہے گی ۔انہوں نے زور دیا کہ ہم ایک ملک دو نظام، ،ہانگ کانگ کاا نتظام ہانگ کانگ کے عوام کے ذریعے، اعلی سطح کی خوداختیار پالیسی اورہانگ کانگ خصوصی انتظامی علاقے کے بنیادی قانون پر عمل درآمد کریں گے اور ہانگ کانگ کی خوشحالی کے قیام کے لئے مزید کوشش کریں گے۔